آئی فون میں منفرد ٹیکنالوجی استعمال کیے جانے کا امکان

اپ ڈیٹ 04 اپريل 2018

ای میل

— اے ایف پی فائل فوٹو
— اے ایف پی فائل فوٹو

ایپل ایسے آئی فون کی تیاری پر کام کررہی ہے جس میں خم دار اسکرین اور ٹچ لیس جیسچر کنٹرول انتہائی منفرد فیچرز دیئے جائیں گے۔

بلومبرگ کی ایک نئی رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ وہ دیگر اسمارٹ فونز سے اپنی ڈیوائسز کو الگ کرنے کے لیے ایپل یہ بڑی تبدیلیاں کرنا چاہتی ہے۔

ٹچ لیس اسکرین کا مطلب یہ ہے کہ صارف اپنے آئی فون اسکرین کو چھوئے بغیر اس کے قریب انگلی کو حرکت دے کر بھی ڈیوائس کو استعمال کرسکے گا۔

مزید پڑھیں : ایپل منفرد آئی فون بنانے کا خواہشمند

ایپل اس ٹیکنالوجی پر مبنی آئی فون کے حوالے سے گزشتہ سال نومبر سے سوچ بچار کررہی ہے اور اس حوالے سے ایک پیٹنٹ بھی سامنے آیا تھا، جس کے مطابق آئی فون ایکس کا ٹرو ڈیپتھ کیمرہ سسٹم تھری ڈی اسپیس میں ہاتھ کی حرکات کو شناخت کرسکے گا۔

اس ٹیکنالوجی کے ذریعے ایپل صارفین کو اسمارٹ فونز کے حیران کن تجربے سے گزارنا چاہتی ہے جب وہ ڈسپلے کو چھوئے بغیر بس کچھ دور سے انگلی کی حرکت سے ڈیوائس کنٹرول کرسکیں گے۔

یہ ٹیکنالوجی اگیومینٹڈ رئیلٹی کے لیے موثر ثابت ہوسکتی ہے جس پر ایپل کی جانب سے حالیہ عرصے میں کافی کام کیا گیا ہے۔

تاہم یہ ٹیکنالوجی اس سال ستمبر (ممکنہ) میں سامنے آنے والے آئی فون کا حصہ ہوگی یا نہیں، اس پر رپورٹ میں کچھ نہیں بتایا گیا۔

جہاں تک خم دار اسکرین کی بات ہے تو ایپل کے حوالے سے ایسے ڈسپلے والے آئی فونز کی تیاری کی افواہیں کئی برسوں سے سامنے آرہی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : ایپل کا پرانے آئی فون سست کرنے کا اعتراف

تاہم اس رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ آئی فون کا ڈسپلے اوپر سے نیچے بتدریج خم کھائے گا جو کہ سام سنگ کے فلیگ شپ فونز سے کافی مختلف ہوگا، جس میں سائیڈ ایجز دیئے جاتے ہیں۔

اس قسم کا تجربہ ایل جی کے جی فلیکس فون میں بھی کیا گیا تھا تاہم وہ زیادہ کامیاب نہیں ہوسکا اور ایل جی نے بھی اس خیال کو مزید آگے نہیں بڑھایا۔