وزیرِاعظم عمران خان کی پہلی مرتبہ جی ایچ کیو آمد

اپ ڈیٹ 30 اگست 2018

ای میل

راولپنڈی: وزارتِ عظمیٰ کا منصب سنبھالنے کے بعد وزیرِاعظم عمران خان پہلی مرتبہ جنرل ہیڈ کوارٹرز (جی ایچ کیو) پہنچ گئے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقاتِ عامہ آئی ایس پی آر کے ڈائریکٹر جنرل (ڈی جی) میجر جنرل آصف غفور نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ایک پیغام جاری کیا جس میں انہوں نے بتایا کہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے وزیرِاعظم عمران خان کا استقبال کیا۔

ڈی جی آئی ایس پی آر کے مطابق وزیرِ اعظم کے ہمراہ وزیرِ دفاع، وزیرِ خارجہ، وزیرِ خزانہ، وزیرِ اطلاعات اور وزیرِ مملکت برائے داخلہ بھی موجود ہیں۔

میجر جنرل آصف غفور نے بتایا کہ وزیرِاعظم کو ملکی سیکیورٹی، دفاع اور دیگر اہم امور پر بریفنگ دی گئی۔

وزیر اعظم نے پاک فوج کی خدمات کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ 'قوم کے تعاون سے ملک کو درپیش چیلنجز کو شکست دیں گے۔'

اس موقع پر آرمی چیف کا کہنا تھا کہ 'پاک فوج دفاع وطن کے لیے قوم کی توقعات پر پورا اترے گی۔'

یاد رہے کہ 27 اگست کو وزیرِاعظم عمران خان سے پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے پہلی باضابطہ ملاقات کی تھی اور انہیں وزارتِ عظمیٰ کا منصب سنبھالنے پر مبارکباد پیش کی تھی۔

وزیرِاعظم ہاؤس کی جانب سے جاری ہونے والے اعلامیے میں کہا گیا تھا کہ اس ملاقات میں خطے میں امن کے لیے کوششیں جاری رکھنے کے عزم کا اعادہ کیا گیا۔

3 روز قبل ہونے والی ملاقات میں وزیرِاعظم اور آرمی چیف نے ملاقات کے دوران ملک میں پائیدار امن و استحکام کے عزم کا بھی اظہار کیا تھا۔

مزید پڑھیں: برطانوی ہائی کمشنر کی عمران خان سے ملاقات، انتخابات میں جیت پر مبارکباد

اس کے علاوہ وزیراعظم عمران خان اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی ملاقات میں ملکی سلامتی کی صورتحال پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا تھا۔

25 جولائی کو ہونے والے عام انتخابات میں پاکستان تحریک انصاف مرکز میں سب سے بڑی جماعت بن کر سامنے آئی تھی۔

پی ٹی آئی دیگر سیاسی جماعتوں اور آزاد اراکینِ اسمبلی کے ساتھ مل کر مرکز میں حکومت بنانے میں کامیاب ہوگئی تھی۔