پہلا ٹیسٹ: شان مسعود کی سنچری، پاکستان کے326 رنز کے جواب میں انگلینڈ کے 4 آؤٹ

اپ ڈیٹ 06 اگست 2020

ای میل

شان مسعود 24 سال بعد انگلینڈ میں سنچری کرنے والے پہلے پاکستانی اوپنر بن گئے—فوٹو:پی سی بی ٹوئٹر
شان مسعود 24 سال بعد انگلینڈ میں سنچری کرنے والے پہلے پاکستانی اوپنر بن گئے—فوٹو:پی سی بی ٹوئٹر

پاکستان نے انگلینڈ کے خلاف سیریز کے پہلے میچ کی پہلی اننگز میں اوپنر شان مسعود کی بہترین سنچری کی بدولت 326 رنز بنائے جبکہ میزبان ٹیم کے 4 بلے باز بھی آؤٹ ہوگئے۔

مانچسٹر میں کھیلے جارہے پہلے ٹیسٹ کے دوسرے روز جب کھیل کا آغاز ہوا تو پاکستان کا اسکور 2 وکٹوں پر 139 رنز تھا۔

پہلے روز ذمہ دارانہ بلے بازی کرنے والے بابراعظم اسکور میں اضافہ نہیں کرپائے اور انگلینڈ کے تجربہ کار باؤلر جیمز اینڈرسن کی گیند پر جوروٹ کے ہاتھوں آؤٹ ہوگئے۔

بابراعظم نے 69 رنز بنائے تھے، جس کے بعد اسد شفیق بھی زیادہ دیر وکٹ پر ٹھہرنہ سکے اور 7 رنز بنا کر پویلین لوٹے۔

یہ بھی پڑھیں:پہلا ٹیسٹ: پاکستان کے دو وکٹوں پر 139 رنز، بابر کی شاندار نصف سنچری

وکٹ کیپر محمد رضوان کی 9 رنز کی مختصر اننگز کرس ووکس نے سمیٹ لی تو پاکستان کا اسکور 176 رنز تھا تاہم شان مسعود نے شاداب خان کے ساتھ مل کر اسکور کو آگے بڑھایا۔

شان مسعود نے پراعتماد انداز میں بلے بازی کرتے ہوئے اپنی سنچری مکمل کی اور انگلینڈ میں 24 سال بعد سنچری کرنے والے پہلے پاکستانی اوپنر بن گئے۔ انگلینڈ میں سابق کپتان اور اوپنر سعید انور نے 1996 میں اوول میں سنچری بنائی تھی جس کے بعد کسی پاکستانی اوپنر کو یہ اعزاز حاصل نہیں ہوا تھا۔

شان مسعود کی ٹیسٹ کرکٹ میں مسلسل تیسری سنچری ہے اور اس طرح وہ پاکستان کے عظیم بلے بازوں کی فہرست میں شامل ہوگئے ہیں۔

شاداب خان 281 کے مجموعے پر 45 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے، جس کے بعد یاسر شاہ نے 5رنز کا اضافہ کیا جبکہ محمد عباس صفر پر آؤٹ ہوئے، اس وقت پاکستان کا اسکور 300 نہیں ہوا تھا تاہم شان مسعود نے نفسیاتی حد کو عبور کرنے میں کامیاب ہوئے۔

شان مسعود کی 156 رنز کی شان دار اننگز 317 کے مجموعی اسکور پر اختتام کو پہنچی، جس میں 18 چوکے اور دو چھکے شامل تھے۔

شاہین شاہ آفریدی نے آخری وکٹ میں 9 رنز بناکر پاکستان کا مجموعہ 326 رنز تک پہنچایا جبکہ نسیم شاہ صفر پر آؤٹ ہونے والے آخری بلے باز تھے۔

انگلینڈ کی جانب سے اسٹورٹ براڈ اور آرچر نے 3،3 وکٹیں حاصل کیں اور ووکس نے دو بلے بازوں کو آؤٹ کیا۔

پاکستان کے 326 رنز کے جواب نگلینڈ نے جب اپنی پہلی اننگز شروع کی تو شاہین شاہ آفریدی اور محمد عباس نے اوپر تلے تین وکٹیں حاصل کرکے مشکلات سے دو چار کردیا۔

شاہین آفریدی نے فوری برنس کو 4 جبکہ محمد عباس نے ڈوم آبلے اور بین اسٹوکس کو 12 رنز پر ہی آؤٹ کرکے اہم کامیابی دلادی۔

کپتان جوروٹ اور پوپ نے 48 رنز کی شراکت قائم کی اور مجموعہ 62 رنز تک پہنچایا لیکن اس دفعہ تجربہ کار لیگ اسپنر یاسر شاہ نے انگلینڈ کی سب سے بڑی وکٹ گرادی۔

یاسر شاہ نے جوروٹ کو رضوان کے ہاتھوں آؤٹ کردیا اور انگلینڈ کی چوتھی وکٹ حاصل کی۔

انگلینڈ نے 4 وکٹوں پر 70 رنز بنالیے ہیں۔

خیال رہے گزشتہ روز اظہرعلی نے نے ٹاس جیت کر پہلے خود بیٹنگ کا فیصلہ کیا تھا اور دونوں اوپنرز نے محتاط بلے بازی شروع کی تھی لیکن آرچر نے 36 کے مجموعے پر عابد علی کی وکٹیں اڑا دی تھیں۔

کپتان اظہرعلی کھاتہ کھولے بغیر کرس ووکس کی وکٹ بن گئے تھے، جس کے بعد بابراعظم نے نصف سنچری مکمل کی تھی جبکہ شان مسعود نے 46 رنز بنائے تھے۔

میچ کے لیے دونوں ٹیمیں ان کھلاڑیوں پر مشتمل ہیں۔

پاکستان: اظہر علی(کپتان)، شان مسعود، عابد علی، اسد شفیق، بابر اعظم، محمد رضوان، شاداب خان، یاسر شاہ، محمد عباس، شاہین شاہ آفریدی اور نسیم شاہ۔

انگلینڈ: جو روٹ(کپتان)، ڈوم سبلی، رورے برنز، بین اسٹوکس، اولی پوپ، جوز بٹلر، کرس ووکس، ڈوم بیس، اسٹورٹ براڈ، جوفرا آرچر اور جیمز اینڈرسن۔