پی آئی اے کا رضاکارانہ ریٹائرمنٹ لینے والے ملازمین کو واجبات ادا کرنے کا اعلان

اپ ڈیٹ 19 فروری 2021
ایئرلائن انتظامیہ نے 31 جنوری تک تمام واجبات کلیئر کرنے کا وعدہ کیا تھا—فائل فوٹو: اے ایف پی
ایئرلائن انتظامیہ نے 31 جنوری تک تمام واجبات کلیئر کرنے کا وعدہ کیا تھا—فائل فوٹو: اے ایف پی

کراچی: پاکستان انٹرنیشنل ایئرلائنز (پی آئی اے) نے رضاکارانہ علیحدگی اسکیم (وی ایس ایس) کے تحت قبل از وقت ریٹائر ہونے والے تقریباً 2 ہزار ملازمین کے واجبات کی ادائیگی آئندہ ہفتے سے شروع کرنے کا اعلان کیا ہے۔

ڈان اخبار کی رپورٹ کے مطابق پی آئی اے کا بیان احتجاجی ملازمین کے ان الزامات کے ایک روز بعد سامنے آیا جس میں انہوں نے کہا تھا کہ وی ایس ایس واجبات کی عدم ادائیگی کی وجہ سے سخت دباؤ کا شکار 2 ملازمن ہارٹ اٹیک سے انتقال کر گئے۔

ساتھ ہی انہوں نے چیف جسٹس آف پاکستان سے ان کے 'معاشی قتل' پر از خود نوٹس لینے کا مطالبہ بھی کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں:’معاشی قتل‘ پر پی آئی اے کے احتجاجی ملازمین کا چیف جسٹس سے مدد کا مطالبہ

پی آئی اے کے جاری کردہ بیان میں بتایا گیا کہ کراچی میں نیشنل بینک آف پاکستان میں ایئرلائن کا ایک خصوصی اکاؤنٹ کھولا گیا ہے جس کو اکاؤنٹنٹ جنرل پاکستان (اے جی پی) کا زونل آفس کنٹرول کرے گا۔

بیان میں یہ بھی بتایا گیا کہ مذکورہ اکاؤنٹ میں فنڈز منتقل کیے جاچکے ہیں، پی آئی اے وزارت ہوا بازی اور اے جی پی کے تعاون سے آئندہ ہفتے سے ادائیگیوں کا آغاز کرے گی۔

خیال رہے کہ تقریباً 2 ہزار پی آئی اے ملازمین نے 31 دسمبر 2020 کو ختم ہونے والی وی ایس ایس سہولت سے فائدہ اٹھایا تھا اور ایئرلائن انتظامیہ نے 31 جنوری تک تمام واجبات کلیئر کرنے کا وعدہ کیا تھا۔

مزید پڑھیں:پی آئی اے اپنے ملازمین کو رضاکارانہ علیحدگی اسکیم کے واجبات ادا کرنے میں ناکام

ایئرلائن نے حساب لگایا تھا کہ اسے ملازمین کے واجبات ادا کرنے کے لیے 9 ارب 80 کروڑ روپے درکار ہیں جو اس نے وفاقی حکومت سے جاری کرنے کی درخواست کی تھی۔

بیان میں بتایا گیا کہ وفاقی کابینہ سے منظوری ملنے کے بعد وزارت خزانہ نے 9 ارب 60 کروڑ روپے جاری کیے تھے تاہم یہ فنڈز اکاؤنٹنٹ جنرل پاکستان (اے جی پی) کے آڈٹ سے مشروط تھے۔

جس پر پی آئی اے نے اس اقدام کے باعث ملازمین کو ادائیگیوں میں ہونے والی ممکنہ تاخیر پر سخت تحفظات کا اظہار کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں: ایک ہزار 924 ملازمین نے ادارے سے علیحدگی کا انتخاب کیا، پی آئی اے

دوسری جانب وی ایس ایس اسکیم سے مستفید ہونے والے ملازمین نے اب تک تنخواہیں یا ریٹائرمنٹ کے واجبات نہ ملنے پر پی آئی اے، وی ایس ایس کمیٹی کے پلیٹ فارم سے 15 اور 16 فروری کو کراچی اور اسلام آباد میں اس تاخیر کے خلاف احتجاج کیا تھا۔

چنانچہ ایک اعلیٰ سطح کا اجلاس ہوا جس میں سی ای او پی آئی اے اور سیکریٹری ہوا بازی شریک ہوئے۔

اجلاس میں ہونے والے فیصلے کے نتیجے میں حالیہ اقدام سامنے آیا جس کے نتیجے میں آئندہ ہفتوں سے ملازمین کو ادائیگیاں ممکن ہوں گی۔

ضرور پڑھیں

رُوداد ایک مقدمے کی

رُوداد ایک مقدمے کی

وہ سب کچھ بیج کر کینیڈا چلے گئے جہاں وہ اپنی نئی بیوی کے ساتھ مل کر ایک ریسٹورنٹ چلاتے ہیں اور کوئی بھی بات نہیں بھولتے۔

تبصرے (0) بند ہیں