شیاؤمی کا وہ فلیگ شپ فون جو ایپل اور سام سنگ کو پیچھے چھوڑ دے گا

12 جون 2021
می 11 الٹرا — فوٹو بشکریہ شیاؤمی
می 11 الٹرا — فوٹو بشکریہ شیاؤمی

شیاؤمی نے کچھ ماہ پہلے اپنا فلیگ شپ فون می 11 الٹرا متعارف کرایا تھا اور اب وہ اس کے بعد کے ماڈل کی تیاری کررہی ہے۔

یقیناً می الٹرا 12 ہی اس کی جگہ لے گا مگر یہ کمپنی کا پہلا فلیگ شپ فون ہوگا جس میں سیلفی کیمرا اسکرین کے اندر چھپا ہوگا۔

یہ دعویٰ چینی سوشل میڈیا ویب سائٹ ویبو پر ٹیکنالوجی لیکس کرنے والے ایک معروف صارف ڈی سی ایس نے کی، جو اکثر درست تفصیلات جاری کرتا ہے۔

اس لیک میں دعویٰ کیا گیا کہ شیاؤمی کا یہ نیا فلیگ شپ فون الٹرا وائیڈ بینڈ ٹریکنگ ٹیکنالوجی سے لیس ہوگا جبکہ اس میں آن اسکرین کیمرا ٹیکنالوجی بھی دی جائے گی۔

الٹرا وائیڈ ٹریکنگ ٹیکنالوجی بالکل نئی نہیں بلکہ سام سنگ اور ایپل کی جانب سے اس کا استعمال کیا جارہا ہے۔

آئی فون 12 اور گلیکسی ایس 21 میں اس ٹیکنالوجی کا استعمال ایئرٹیگ اور اسمارٹ ٹیگ کے ساتھ کیا جارہا ہے تاکہ فون کی مستند ٹریکنگ کی جاسکے۔

اگر یہ لیک درست ثابت ہوئی اس کا مطلب یہ ہوگا کہ شیاؤمی کی جانب سے بھی ایک ٹریکنگ ڈیوائس پر کام کیا جارہا ہے جو الٹرا وائیڈ بینڈ ٹیکنالوجی کو سپورٹ کرسکے۔

مگر سب سے خاص اسکرین کے اندر چھپا سیلفی کیمرا ہوگا جو فی الحال صرف چین کی کمپنی زی ٹی ای کے ایکسون 20 فائیو جی فون میں ہی دستیاب ہے، مگر اس کے پکسلز زیادہ متاثر کن نہیں۔

ایپل، سام سنگ اور گوگل سمیت دیگر کمپنیوں کی جانب سے بھی اس ٹیکنالوجی پر کام کیا جارہا ہے مگر اب تک وہ زیادہ پیشرفت نہیں کرسکے۔

رپورٹ کے مطابق آن اسکرین کیمرا ٹیکنالوجی میں روشی کے راستے کے حوالے سے کچھ رکاوٹوں کا سامنا ہے۔

شیاؤمی نے اس حوالے سے کس حد تک پیشرفت کی ہے، وہ تو واضح نہیں مگر اس کی جانب سے کافی عرصے سے اس ٹیکنالوجی پر مبنی فون کی تیاری پر کام کیا جارہا ہے۔

شیاؤمی کے اس فون میں 120 واٹ الٹرا فاسٹ چارجنگ ٹیکنالوجی اور 70 واٹ فاسٹ وائرلیس چارجنگ ٹیکنالوجی بھی موجود ہوسکتی ہے۔

تبصرے (0) بند ہیں