دوسرے ٹی20 میں حفیظ کی شاندار باؤلنگ، پاکستان 7 رنز سے کامیاب

01 اگست 2021
محمد حفیظ نے چار اوورز کے کوٹے میں ایک میڈن کراتے ہوئے چھ رنز کے عوض ایک وکٹ حاصل کی— فوٹو بشکریہ آئی سی سی
محمد حفیظ نے چار اوورز کے کوٹے میں ایک میڈن کراتے ہوئے چھ رنز کے عوض ایک وکٹ حاصل کی— فوٹو بشکریہ آئی سی سی
کپتان بابر اعظم نے 2 چھکوں اور چار چوکوں کی مدد سے 51 رنز بنائے— فوٹو بشکریہ پاکستان کرکٹ
کپتان بابر اعظم نے 2 چھکوں اور چار چوکوں کی مدد سے 51 رنز بنائے— فوٹو بشکریہ پاکستان کرکٹ

پاکستان نے محمد حفیظ کی نپی تلی باؤلنگ کی بدولت ویسٹ انڈیز کو دوسرے ٹی20 میچ میں 7 رنز سے شکست دے کر سیریز میں 0-1 کی برتری حاصل کر لی۔

گیانا میں کھیلے گئے سیریز کے دوسرے ٹی20 میچ میں ویسٹ انڈیز کے کپتان کیرن پولارڈ نے ٹاس جیت کر پاکستان کو بیٹنگ کی دعوت دی۔

شرجیل خان اور محمد رضوان نے ٹیم کو 46 رنز کا آغاز فراہم کیا جس کے بعد شرجیل کی 20 گیندوں کی اننگز اختتام کو پہنچی۔

اس کے بعد رضوان کا ساتھ دینے کپتان بابر اعظم آئے اور دونوں نے دوسری وکٹ کے لیے 67 رنز کی شراکت قائم کی، رضوان 46 رنز کی اننگز کھیلنے کے بعد رن آؤٹ ہو کر پویلین لوٹ گئے۔

کپتان بابر اعظم نے ایک مرتبہ پھر شاندار بیٹنگ کرتے ہوئے اپنی نصف سنچری مکمل کی لیکن اس مرحلے پر میچ میں بارش نے مداخلت کردی اور میچ کو کچھ دیر کے لیے روکنا پڑا۔

بارش کے بعد میچ دوبارہ شروع ہوا تو قومی ٹیم رنز بنانے کا تسلسل برقرار نہ رکھ سکی اور یکے بعد دیگرے وکٹیں گنواتی رہی۔

کپتان بابر اعظم 51 بنا کر آؤٹ ہوئے جبکہ محمد حفیظ صرف چھ رنز بنانے کے بعد چلتے بنے۔

جیسن ہولڈر نے پہلی گیند پر حسن علی کو آؤٹ کیا اور اگلی گیند پر صہیب مقصود کی جانب سے مارے گئے چھکے کو شیفرڈ نے ناقابل یقین کیچ میں تبدیل کر کے پاکستان کو ساتواں نقصان پہنچایا۔

اننگز کی آخری گیند پر شاداب خان رن آؤٹ ہو کر پویلین لوٹے تو پاکستان کی اننگز بھی اختتام کو پہنچی۔

پاکستان نے مقررہ اوورز میں 8 وکٹوں کے نقصان پر 157رنز بنائے، ویسٹ انڈیز کی جانب سے جیسن ہولڈر نے 4 وکٹیں حاصل کیں۔

ویسٹ انڈیز نے اننگز کا آغاز کیا تو حفیظ نے دوسری ہی گیند پر آندرے فلیچر کی وکٹیں بکھیر کر ٹیم کو پہلی کامیابی دلا دی۔

حفیظ نے عمدہ باؤلنگ کا سلسلہ جاری رکھا جس کی وجہ سے ویسٹ انڈین بلے باز کھل کر بیٹنگ نہ کر سکے۔

کرس گیل نے 20 گیندیں کھیلنے کے باوجود 16 رنز بنائے اور حسن علی کو وکٹ دے بیٹھے جبکہ دیگر بلے بازوں کو تسلسل سے رنز بنانے میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔

ایون لوئس نے شیمرون ہٹمائر کے ساتھ مل کر اسکور کو 70 رنز تک پہنچایا لیکن اسی مرحلے پر شیمرون ہٹمائر چلتے بنے جبکہ چھ رنز کے اضافے سے وکٹ پر سیٹ بلے باز ایون لوئس 32 رنز بنانے کے بعد ریٹائرڈ ہرٹ ہو گئے۔

اس موقع پر ایسا محسوس ہوتا تھا کہ شاید پاکستانی ٹیم جلد فتح حاصل کر لے گی لیکن نکولس پوران نے جارحانہ بیٹنگ سے میچ کا نقشہ بدل دیا۔

پوران نے 33 گیندوں پر 6 چھکوں اور 4 چوکوں کی مدد سے 63 رنز کی اننگز کھیلی اور کیرن پولارڈ کے ساتھ مل کر 64 رنز جوڑے۔

آخری اوور میں ویسٹ انڈیز کو فتح کے لیے 20 رنز درکار تھے لیکن وہ صرف 12 رنز بنا سکے اور اس طرح پاکستان نے میچ 7 رنز سے فتح حاصل کر کے سیریز میں بھی 0-1 کی برتری حاصل کر لی۔

4 اوورز کے کوٹے میں چھ رنز کے عوض ایک وکٹ لینے والے محمد حفیظ کو میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔

یاد رہے کہ سیریز کا پہلا ٹی20 میچ بارش کی وجہ سے بے نتیجہ ختم ہو گیا تھا۔

میچ کے لیے دونوں ٹیمیں ان کھلاڑیوں پر مشتمل تھیں۔

پاکستان: بابر اعظم(کپتان)، محمد رضوان، شرجیل خان، فخر زمان، محمد حفیظ، صہیب مقصود، شاداب خان، حسن علی، محمد وسیم جونیئر، شاہین شاہ آفریدی اور عثمان قادر۔

ویسٹ انڈیز: کیرن پولارڈ(کپتان)، آندرے فلیچر، ایون لوئس، کرس گیل، شیمرون ہٹمائر، نکولس پوران، ڈیوین براوو، ہیڈن واش، جیسن ہولڈر، عقیل حسین اور روماریو شیفرڈ۔

تبصرے (0) بند ہیں