سعودی عرب میں پہلی بار انٹرنیشنل فلم فسیٹیول کا انعقاد

07 دسمبر 2021
فلم فیسٹیول میں کوئی پاکستانی فلم پیش نہیں ہوگی—فوٹو: اے ایف پی
فلم فیسٹیول میں کوئی پاکستانی فلم پیش نہیں ہوگی—فوٹو: اے ایف پی

اسلامی دنیا کے اہم ترین ملک سعودی عرب میں پہلی بار عالمی فلم فیسٹیول کا انعقاد کیا گیا، جس میں امریکا، برطانیہ، فرانس، مصر، بھارت اور ملائیشیا سمیت دنیا کے متعدد ممالک سے اداکاروں نے شرکت کی۔

فلم فیسٹیول میں بعض اداکارائیں مکمل لباس میں شریک ہوئیں—فوٹو: ریڈ سی فلم فیسٹیول ٹوئٹر
فلم فیسٹیول میں بعض اداکارائیں مکمل لباس میں شریک ہوئیں—فوٹو: ریڈ سی فلم فیسٹیول ٹوئٹر

سعودی عرب کے ساحلی شہر جدہ میں ہونے والے اپنی نوعیت کے منفرد اور پہلے فلم فیسٹیول ’ریڈ سی انٹرنیشنل فلم فیسٹیول‘ (آر ایس آئی ایف ایف) میں دنیا بھر کی معروف شوبز شخصیات نے شرکت کی۔

فیسٹیول میں دنیا بھر کی اداکارائیں شریک ہوئیں—فوٹو: ریڈ سی فلم فیسٹیول ٹوئٹر
فیسٹیول میں دنیا بھر کی اداکارائیں شریک ہوئیں—فوٹو: ریڈ سی فلم فیسٹیول ٹوئٹر

اپنی نوعیت کے منفرد فلم فیسٹیول میں دنیا کے متعدد ممالک کی 135 سے زائد فلمیں دکھائی جائیں گی۔

فلم فیسٹیول میں پیش کی جانے والی زیادہ تر فلمیں عربی زبان کی ہیں، تاہم فیسٹیول کے دوران انگریزی، فرانسیسی، اسپینش، ہندی، بگالی اور ملایلم سمیت دیگر زبان کی فلمیں بھی دکھائی جائیں گی۔

ریڈ کارپٹ پر غیر ملکی اداکاراؤں نے جلوے بکھیرے—فوٹو: اے ایف پی
ریڈ کارپٹ پر غیر ملکی اداکاراؤں نے جلوے بکھیرے—فوٹو: اے ایف پی

فلم فیسٹیول میں بولی وڈ کی آنے والی اسپورٹس فلم ’83‘ کو بھی پیش کیا جائے گا، تاہم بد قسمتی سے ’ریڈ سی فلم فیسٹیول‘ میں کوئی بھی پاکستانی فلم پیش نہیں کی جا سکے گی۔

فلم فیسٹیول میں عرب ممالک کی اداکارائیں بھی شریک ہوئیں—فوٹو: ریڈ سی فیسٹیول، ٹوئٹر
فلم فیسٹیول میں عرب ممالک کی اداکارائیں بھی شریک ہوئیں—فوٹو: ریڈ سی فیسٹیول، ٹوئٹر

فلم فیسٹیول کا ریڈ کارپٹ 6 دسمبر کو سجایا گیا، جس میں فرانسیسی، امریکی، اسپینش، مصری، مراکشی، اماراتی اور بھارتی اداکاراؤں نے جلوے بکھیرے۔

’ریڈ سی فلم فیسٹیول‘ رواں ماہ 15 دسمبر تک جاری رہے گا اور 10 روزہ فلم فیسٹیول میں فلموں کی نمائش کے علاوہ ڈانس و آرٹ کے پروگرام بھی منعقد کیے جائیں گے جب کہ اہم شخصیات سے گفتگو بھی کی جائے گی۔

ضرور پڑھیں

’اٹھو کاروانِ سحر آگیا‘

’اٹھو کاروانِ سحر آگیا‘

پاکستان ’قراردادِ پاکستان‘ کے بعد طلوعِ آزادی کی جس منزل سے ہم کنار ہوا اس کی داستان نسلِ نو کو سنانی ضروری ہے۔

تبصرے (0) بند ہیں