• KHI: Zuhr 12:39pm Asr 5:19pm
  • LHR: Zuhr 12:09pm Asr 5:01pm
  • ISB: Zuhr 12:14pm Asr 5:10pm
  • KHI: Zuhr 12:39pm Asr 5:19pm
  • LHR: Zuhr 12:09pm Asr 5:01pm
  • ISB: Zuhr 12:14pm Asr 5:10pm

لاہور ہائیکورٹ: وفاقی حکومت کو ججز تعیناتی کیلئے 15 روز کی مہلت

شائع May 24, 2024
— فائل فوٹو: اے ایف پی
— فائل فوٹو: اے ایف پی

لاہور ہائی کورٹ نے وفاقی حکومت کو ججز کی تعیناتی کے لیے 15 روز کی مہلت دے دی۔

پنجاب کی خصوصی عدالتوں میں ججز کی تعیناتی سے متعلق کیس کی سماعت لاہور ہائی کورٹ کے چیف جسٹس ملک شہزاد احمد نے کی۔

ایڈوکیٹ جنرل پنجاب نے ججز کی تعیناتی کے نوٹی فکیشن عدالت میں پیش کر دیے۔

ایڈووکیٹ جنرل پنجاب خالد اسحٰق کا کہنا تھا کہ حکومت پنجاب نے پنجاب کی خصوصی عدالتوں میں ججز تعینات کرکے نوٹی فکیشن جاری کردیے۔

چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ نے ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کے مثبت کردار کی تعریف کی، ان کا کہنا تھا کہ ہمارے لیے سب قابل احترام ہیں، آپ نے اچھا رویہ دکھایا ہے۔

ایڈووکیٹ جنرل پنجاب نے بتایا کہ پنجاب کی تمام انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالتوں میں ججز کا تقرر ہو گیا ہے، مزید بتایا کہ 2 اینٹی کرپشن، اور ایک، ایک جج کی تقرری سروس ٹربیونل اور کنزیومر کورٹ میں کی گئی ہے۔

ایڈووکیٹ جنرل پنجاب خالد اسحٰق کا کہنا تھا کہ اگر کسی جگہ پر تعنیاتی ہونی ہے وہ بھی جلد از جلد مکمل کر لی جائے گی۔

دوران سماعت وفاقی حکومت نے ججز کی تعیناتی کے لیے مزید مہلت مانگ لی، وکیل وفاقی حکومت کا کہنا تھا کہ وفاقی کابینہ کے اجلاس میں ججز کی تعیناتی کی منظوری لی جائے گی۔

چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ نے ریمارکس دیے کہ اب پنجاب حکومت نے ججز کہ تعیناتی کر دی ہے تو وفاقی حکومت نے مزید وقت مانگ لی ہے، مزید کہنا تھا کہ کابینہ سے سرکولیشن کے ذریعے بھی ججز کی تقرری ہو سکتی ہے۔

لاہور ہائیکورٹ نے وفاقی حکومت کو ججز کی تعیناتی کے لیے 15 روز کی مہلت دے دی اور کارروائی ملتوی کر دی۔

کارٹون

کارٹون : 23 جولائی 2024
کارٹون : 22 جولائی 2024