پبلشنگ پارٹنر

افغان تماشائیوں کی ہنگامہ آرائی، آئی سی سی نے کارروائی کا فیصلہ کرلیا

ای میل

پاکستان اور افغانستان کے میچ کے دوران افغان تماشائی اپنی ٹیم کی شکست دیکھ کر پاکستانی شائقین سے لڑ پڑے۔ — فوٹو: ٹوئٹر
پاکستان اور افغانستان کے میچ کے دوران افغان تماشائی اپنی ٹیم کی شکست دیکھ کر پاکستانی شائقین سے لڑ پڑے۔ — فوٹو: ٹوئٹر

کرکٹ کی عالمی تنظیم انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے پاکستان اور افغانستان کے درمیان ہونے والے میچ کے دوران افغان تماشائیوں کی ہنگامہ آرائی کے خلاف کارروائی کرنے کا فیصلہ کرلیا۔

ڈان اخبار کی رپورٹ کے مطابق آئی سی سی کے ترجمان کا کہنا تھا کہ ہم تمام معاملات سے آگاہ ہیں۔

ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ ہم اسٹیڈیم میں سیکیورٹی اہلکاروں اور یورکشائر پولیس سے رابطے میں ہیں تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ ایسا واقعہ دوبارہ نہ ہو۔

آئی سی سی ترجمان کا کہنا تھا کہ ہم اس طرح کے رویے کو برداشت نہیں کرتے اور چند لوگوں کی جانب سے کیے گئے ہنگامے کے خلاف ایکشن لیا جائے گا جس سے کثیر تعداد میں موجود مداحوں کی تفریح متاثر ہوئی ہے۔

مزید پڑھیں: ورلڈ کپ: عماد نے بازی پلٹ دی، افغانستان کو شکست

خیال رہے کہ ہیڈنگلے لیڈز میں پاکستان اور افغانستان کے درمیان ہونے والے ورلڈکپ میچ کے دوران دونوں ممالک کے شائقین آپس میں لڑ پڑے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر شیئر ہونے والی ویڈیوز میں واضح طور پر دیکھا جاسکتا ہے کہ اپنی ٹیم کی وکٹیں گرتی دیکھ کر افغان تماشائی طیش میں آ گئے اور انہوں نے جشن مناتے پاکستانیوں کو تشدد کا نشانہ بنایا۔

ایک شائق نے غیر ملکی خبر رساں ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ تماشائیوں کے درمیان جھگڑا میچ کے آغاز میں ہی شروع ہوگیا تھا جو بڑھتا ہوا پورے میدان تک پہنچ گیا تاہم سیکیورٹی اہلکاروں نے معاملات کو سنبھالا۔

اس موقع پر پولیس نے فوری طور پر مداخلت کر کے ہنگامہ آرائی کرنے پر 2 افغان باشندوں کو گرفتار کرکے اسٹیڈیم سے باہر لے گئے تھے۔

اس حوالے سے بتایا گیا کہ پاکستانی تماشائی ٹکٹ نہ ملنے کی وجہ سے گراؤنڈ کے باہر موجود تھے اور افغان بلے باز کی تیسری وکٹ گرنے پر پاکستانی تماشائی خوشی منا رہے تھے۔

اسی دوران طیش میں آکر افغان تماشائیوں کی بڑی تعداد نے پاکستانی نوجوان پر تشدد شروع کردیا۔