زائرہ وسیم کو دوران پرواز جنسی ہراساں کرنے والے شخص کو 3 سال قید

ای میل

فوٹو: بولی وڈ لائف
فوٹو: بولی وڈ لائف

بولی وڈ کی نامور اداکارہ زائرہ وسیم نے 2017 میں اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹ پر ایک ویڈیو شیئر کرتے ہوئے دعویٰ کیا تھا کہ انہیں دوران پرواز ایک شخص نے جنسی طور پر ہراساں کیا جسے اب 3 سال قید کی سزا سنا دی گئی۔

برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کی رپورٹ کے مطابق اس واقعے کے دوران زائرہ وسیم کی عمر 17 سال تھی اس لیے ویکاس سچدیو نامی اس شخص کو بچوں کے تحفظ کے قوانین کے تحت 3 سال جیل کی سزا سنائی گئی۔

خیال رہے کہ زائرہ وسیم نے اپنے انسٹاگرام پر اسٹوری کے ذریعے شیئر کیا تھا کہ دہلی سے ممبئی جانے والی پرواز میں انہیں ایک شخص نے اس وقت جنسی طور پر ہراساں کیا جب وہ غنودگی میں تھیں،

اداکارہ نے دعویٰ کیا کہ وہ شخص اپنے پاؤں سے انہیں نامناسب انداز میں گردن اور کمر کی طرف چھوتا رہا۔

زائرہ کے مطابق 'یہ سلسلہ 5 سے 10 منٹ تک جاری رہا جب انہیں اس بات کا یقین ہوچکا تھا کہ انہیں ہراساں کیا جارہا ہے'۔

مزید پڑھیں: 'اداکاری سے ایمان متاثر ہورہا تھا تو میں بولی وڈ چھوڑ رہی ہوں'

زائرہ نے اہنی ایک ویڈیو بھی شیئر کی تھی، جبکہ ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ پہلے انہیں ایسا محسوس ہوا کہ انہیں پرواز کی وجہ سے بےسکونی ہوئی تاہم بعدازاں انہیں احساس ہوا کے کوئی انہیں ہراساں کررہا ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ 'میں اس لیے آواز اٹھا رہی کوئی ہماری مدد نہیں کرسکتا جب تک ہم خود اپنی مدد نہ کرلیں'۔

زائرہ وسیم کے مطابق انہوں نے اس شخص کی ویڈیو بنانے کی بھی کوشش کی تاہم اندھیرے کے باعث وہ ایسا کرنے میں ناکام رہیں، تاہم پرواز کے عملے کی مدد سے پولیس نے بعدازاں اس شخص کو گرفتار کرلیا۔

اداکارہ نے ایئرلائن عملے کو بھی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا تھا کہ کسی نے ان کی مدد نہیں کی، جبکہ عملے نے اس الزام کو مسترد کرتے ہوئے واضح کیا کہ اس قسم کا برتاؤ قابل قبول نہیں۔

زائرہ نے عامر خان کے ساتھ دو فلموں میں کام کیا — فوٹو: فائل
زائرہ نے عامر خان کے ساتھ دو فلموں میں کام کیا — فوٹو: فائل

یاد رہے کہ زائرہ وسیم نے 2016 میں عامر خان کی فلم 'دنگل' کے ساتھ بولی وڈ میں ڈیبیو کیا۔

اس فلم کی کامیابی کے بعد زائرہ کو بھارت میں نیشنل ایوارڈ سے بھی نوازا گیا، جس کے بعد ان کی ایک اور فلم 'سیکرٹ سپراسٹار' سامنے آئی اور وہ بھی کامیاب ثابت ہوئی۔

تاہم گزشتہ سال اداکارہ نے فلمی صنعت کو خیرباد کہنے کا اعلان کردیا کیوں کہ ان کے کیرئیر کا انتخاب ان کے مذہبی عقائد پر اثرانداز ہورہا تھا۔