کورونا وائرس: بھارت میں غریبوں کیلئے 22.6 ارب ڈالر کے امدادی پیکج کا اعلان

اپ ڈیٹ 26 مارچ 2020

ای میل

بھارت بھر میں اب تک وائرس سے کم از کم 600 سے زائد افراد متاثر اور 13افراد ہلاک ہو چکے ہیں— فائل فوٹو: اے ایف پی
بھارت بھر میں اب تک وائرس سے کم از کم 600 سے زائد افراد متاثر اور 13افراد ہلاک ہو چکے ہیں— فائل فوٹو: اے ایف پی

بھارتی حکومت نے ملک میں کورونا وائرس کے تیزی سے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے اعلان کردہ لاک ڈاؤن کے بعد نے غریبوں کی مدد کے لیے 22.6 ارب ڈالر کی خطیر رقم کے پیکج کا اعلان کردیا۔

یاد رہے کہ بھارت میں کورونا وائرس کا پھیلاؤ روکنے کے لیے گزشتہ روز سے ملک بھر میں 21 روزہ لاک ڈاؤن کا آغاز کردیا گیا تھا۔

مزید پڑھیں: کورونا سے تحفظ کے اقدامات خوراک کی قلت کا باعث بنیں گے، ترجمان اقوام متحدہ

بھارتی خبر رساں ادارے انڈین ایکسریس کے مطابق وزیر خزانہ نرملا سیتھارامن نے 'غریب کلیان یوجنا' کے تحت ملک کے شہری و دیہی آبادی کے غریب افراد، یومیہ اجرت پر کمانے والے افراد اور دیگر متاثرہ افراد کے لیے 22.6 ارب ڈالر کی خطیر رقم کے ریلیف پیکج کا اعلان کردیا۔

واضح رہے کہ بھارت بھر میں اب تک وائرس سے کم از کم 600 سے زائد افراد متاثر اور 13 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

نرملا نے جمعرات کو پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں فوری مدد کے منتظر دیہی و شہری آبادی کے غریب افراد کے لیے پیکج تیار ہے۔

یہ بھی پڑھیں: کورونا وائرس: اٹلی میں سب سے زیادہ 7 ہزار ہلاکتیں، عالمی سطح پر اموات 21 ہزار سے تجاوز

ان کا کہنا تھا کہ ملک کے 80 کروڑ افراد یا دو تہائی آبادی کو آئندہ 3 ماہ تک 5 کلو چاول یا آٹا مفت ملے گا ، یہ انہیں اس پہلے سے دیئے جانے والے 5 کلو راشن کے علاوہ ہو گا، اس کے علاوہ انہیں ایک کلو اضافی دال بھی دی جائے گی۔

وزیر خزانہ نے کہا کہ راشن کارڈ کے حامل افراد پبلک ڈسٹری بیوشن سسٹم سے دو قسطوں میں دال چاول وغیرہ لے سکتے ہیں اور ان اقدامات سے اس بات کو یقینی بنایا جائے گا کہ کوئی بھی غریب بھوکا نہ رہے۔

سرکاری اعدادوشمار کے مطابق بھارت کے پاس اس وقت 5.849 کروڑ ٹن خوراک کا ذخیرہ موجود ہے جس میں تقریباً 3.1 کروڑ ٹن چاول اور اور 2.752 کروڑ ٹن دالوں کا ذخیرہ شامل ہے۔

مزید پڑھیں: کورونا وائرس سے تحفظ پر پھیلنے والے ابہام اور ان کی حقیقت

نرملا نے محکمہ صحت کے ہر فرد کے لیے فی کس 50 لاکھ روپے کی میڈیکل انشورنس دینے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ انہیں یہ انشورنس 3 ماہ کے لیے حاصل ہو گی اور امید ہے کہ وہ اس پر قابو پانے میں کامیاب رہیں گے۔

وزیر خزانہ کے اعلان سے قبل اسٹاک ایکسچینج میں 5 فیصد اضافہ ہوا جبکہ ڈالر کے مقابلے میں بھارتی روپے کی قدر میں بھی 64 فیصد اضافہ دیکھا گیا۔

انہوں نے اعلان کیا کہ ملک کے 8 کروڑ 69 لاکھ کسانوں کو فی کس 2 ہزار روپے وزیر اعظم کے کسان یوجنا پروگرام کے تحت ان کے اکاؤنٹ میں منتقل کردیے جائیں گے اور انہیں 2 ہزار روپے کی پہلی قسط اپریل میں مل جائے گی۔

بھارتی وزیر خزانہ نے کہا کہ آئندہ تین ماہ کے دوران دو اقساط میں اضافی فی کس ایک ہزار روپے 60 سے زائد عمر کے شہریوں، بیواؤں اور معذور افراد کو دیے جائیں گے جس سے 3 کروڑ افراد کو فائدہ ہو گا۔

یہ بھی پڑھیں: کورونا وائرس: آسٹریلیا میں فوڈ مارکیٹ بند، سیلون کھلے رہنے پر لوگ حیران

اس کے علاوہ انہوں نے آئندہ تین ماہ کے دوران ملک کی 20 کروڑ خواتین کو ہر ماہ 500 روپے دینے کا بھی اعلان کیا جس سے 7 کروڑ گھروں کو فائدہ ہو گا۔

اس کے علاوہ دیگر شعبوں میں بھی عوام کے لیے مختلف مراعات کا اعلان کیا گیا جبکہ پراویڈنٹ فنڈ میں بھی 12 فیصد اضافے کی منظوری دی گئی ہے۔

بھارتی وزیر خزانہ نے تعمیرات کی صنعت کے رجسٹرڈ ساڑھے 3 کروڑ افراد کے لیے 31 ہزار کروڑ کے فنڈز کا اعلان کیا۔

حکومت نے اس کے علاوہ ٹیکس کی ادائیگی، ٹیکس ری فنڈ فائل کرنے سمیت دیگر حکومتی ادائیگیوں کی تاریخ میں توسیع کردی۔

مزید پڑھیں: پوپ فرانسس کے قریب رہنے والا پادری کورونا کا شکار

یاد رہے کہ چین کے شہر ووہان سے جنم لینے والے کورونا وائرس سے چین میں 3 ہزار سے زائد ہلاکتوں کے بعد دنیا کی سب سے بڑی آبادی کا حامل ملک سخت احتیاطی تدابیر کی بدولت اس وائفرس پر قابو پانے میں کامیاب رہا۔

البتہ بعدازاں یہ دنیا کے دیگر ممالک میں تیزی سے پھیلتا گیا اور اب تک وائرس کے نتیجے میں کم از کم 21 ہزار افراد ہلاک ہو چکے ہیں جہاں سب سے زیادہ ہلاکتیں یورپ میں ہوئی ہیں۔

بھارت بھر میں اب وائرس تیزی سے پھیل رہا ہے جہاں کم از کم 600 سے زائد افراد اس سے متاثر ہو چکے ہیں اور 13 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔