پنجاب: نئی قسم کے کورونا وائرس سے نو عمر، نابالغوں کی بڑی تعداد متاثر

اپ ڈیٹ 01 اپريل 2021
رپورٹ میں کہا گیا کہ ان میں سے 8 ہزار 520 رواں سال کے پہلے تین ماہ  میں ورونا کا شکار ہوئے۔ 
---فائل فوٹو: رائٹرز
رپورٹ میں کہا گیا کہ ان میں سے 8 ہزار 520 رواں سال کے پہلے تین ماہ میں ورونا کا شکار ہوئے۔ ---فائل فوٹو: رائٹرز

لاہور: پنجاب میں گزشتہ 3 ماہ کے دوران کورونا وائرس کی نئی قسم سے نوعمر اور نابالغوں کی ایک بڑی تعداد متاثر ہوگئی ہے۔

ڈان اخبار کی رپورٹ کے مطابق سرکاری اعداد و شمار میں بتایا گیا کہ پنجاب میں انفیکشن پھیلنے کے بعد سے اب تک 18 سال کی عمر سے کم 19 ہزار 367 افراد کے کورونا ٹیسٹ مثبت آچکے ہیں۔

مزید پڑھیں: کورونا وائرس سے مزید 4 ہزار 757 افراد متاثر، فعال کیسز 50 ہزار سے تجاوز کر گئے

رپورٹ میں کہا گیا کہ ان میں سے 8 ہزار 520 رواں سال کے پہلے تین ماہ میں کورونا کا شکار ہوئے۔

اسی طرح پنجاب کے شہر لاہور سے تعلق رکھنے والے متاثرہ بچوں کی تعداد 8 ہزار 390 تھی۔

رپورٹ میں کہا گیا کہ مجموعی طور پر 8 ہزار 390 متاثرہ بچوں میں سے 4 ہزار 133 رواں سال کے پہلے تین ماہ کے دوران جبکہ دیگر گزشتہ سال میں وائرس سے متاثر ہوئے۔

زیادہ تر بچوں میں ہلکی علامات ظاہر ہوئیں اور بعض میں کوئی علامت نہیں تھی لیکن کچھ بچے شدید بیمار ہوگئے تب انہیں ہسپتال منتقل کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں: کورونا وائرس کا آغاز کیسے ہوا؟ اب تک کی مستند تحقیق سامنے آگئی

طبی ماہرین کا خیال تھا کہ کم عمر بچوں اور نو عمر افراد کو ہسپتالوں میں منتقل کیا جارہا ہے جنہیں دیگر امراض بھی لاحق ہیں اور انہیں بیماری سے متاثر ہونے کا شدید خطرہ بھی ہوسکتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ کووڈ کی علامات بڑوں اور بچوں میں ایک جیسی ہیں اور بخار، کھانسی، فلو یا الرجی جیسے دیگر عام بیماریوں کی علامت کی طرح نظر آسکتی ہیں۔

سرکاری اعداد و شمار کے مطابق مارچ 2021 پریشانی کا باعث بنا ہے کیونکہ لاہور میں 2 ہزار 357 بچے جبکہ گزشتہ برس اسی ماہ میں صرف 7 بچے متاثر ہوئے تھے۔

رواں سال فروری میں 739 اور جنوری میں ایک ہزار 37 بچے کورونا سے متاثر ہوئے۔

یہ بھی پڑھیں: کورونا وائرس سے تحفظ پر پھیلنے والے ابہام اور ان کی حقیقت

گزشتہ برس مارچ میں اس صوبے میں انفیکشن کے بعد یہ تعداد سب سے زیادہ تھی۔

پنجاب میں رواں سال فروری میں ایک ہزار 669 اور جنوری میں 2 ہزار 21 بچے کورونا سے متاثر ہوئے جبکہ مارچ میں رپورٹ ہونے والے اعداد و شمار دونوں ماہ کی مجموعی تعداد سے کم رہے۔

لاہور چلڈرن ہسپتال کے ڈین پروفیسر مسعود صادق نے مارچ میں کووڈ سے متاثرہ 3 بچوں کی موت کی تصدیق کی۔

تاہم انہوں نے کہا کہ اموات کی وجہ کمورڈیٹی (ایک سے زائد امراض) تھی۔

انہوں نے بتایا کہ ایک ماہ کے دوران مجموعی طور پر 46 نو عمر بچوں کو طبی امداد کے لیے ہسپتال منتقل کیا گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ فی الحال کورونا سے متاثرہ 17 بچے زیر علاج ہیں جبکہ دیگر کو رخصت دے دی گئی۔

مسعود صادق نے بتایا کہ 17 بچوں میں کورونا کی تصدیق ہوچکی ہے اور وہ زیر علاج ہیں تاہم دیگر کو رخصت کردیا گیا۔

ضرور پڑھیں

تبصرے (0) بند ہیں