ٹوئٹر اکاؤنٹ کی معطلی کے بعد کنگنا رناوٹ کو فیشن ڈیزائنرز کے بائیکاٹ کا سامنا

اپ ڈیٹ 06 مئ 2021
—فائل فوٹو: انسٹاگرام
—فائل فوٹو: انسٹاگرام

مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ ٹوئٹر نے 2 روز قبل گینگ ریپ اور نسل کشی سے متعلق متنازع ٹوئٹس کے باعث بولی وڈ اداکارہ کنگنا رناوٹ کا اکاؤنٹ بند کردیا تھا۔

ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق کنگنا رناوٹ کی متنازع ٹوئٹس کے بعد ان پر شدید تنقید کی جارہی تھی اور اب بھارتی ڈیزائنرز نے بھی اداکارہ کے ساتھ مزید کام کرنے سے انکار کردیا ہے۔

بولی وڈ اداکارہ کنگنا رناوٹ کی جانب سے گینگ ریپ اور نسل کشی سے متعلق متعدد متنازع ٹوئٹس کیے جانے کے بعد مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ ٹوئٹر نے ان کا اکاؤنٹ بند کردیا۔

مزید پڑھیں: گینگ ریپ اور نسل کشی کی ٹوئٹس کے بعد کنگنا رناوٹ کا اکاؤنٹ بند

ڈیزائنر رم زم دادو نے سوشل میڈیا پر ایک پوسٹ شیئر کرتے ہوئے لکھا کہ 'ہم کبھی بھی درست کام کرنے میں تاخیر نہیں کرتے، ہم اپنے سوشل میڈیا پلیٹ فارم سے کنگنا رناوٹ سے اشتراک کی تمام پوسٹس ہٹارہے ہیں اور مستقبل میں ان کے ساتھ کوئی کام نہ کرنے کا عزم کیا ہے'۔

اس حوالے سے ڈیزائنر نے کہا کہ 'اس عالمی وبا کے دوران پہلے ہی بہت زیادہ تباہی پھیلی ہوئی ہے ایسے حالات میں ہم سب کو سیاسی نظریات سے بالاتر ہو کر ایک دوسرے کا خیال رکھنے کی ضرورت ہے'۔

انہوں نے کہا کہ ہم نہیں سمجھتے ہیں معروف شخصیات سمیت کسی کا بھی تشدد کو بڑھاوا دینا درست ہے، تشدد کسی بھی شکل میں ہو اس کی مذمت کرنی چاہیے۔

دوسری جانب دہلی کے ڈیزائنر آنند بھوشن نے بھی ایک سوشل میڈیا پوسٹ میں کنگنا رناوٹ کے بائیکاٹ کا اعلان کیا اور کہا کہ دیگر ڈیزائنرز کو بھی ان کے ساتھ کام کرنے سے پہلے 2 مرتبہ سوچنا چاہیے۔

یہ بھی پڑھیں: کنگنا رناوٹ، علی گل پیر کی مزاحیہ ویڈیو کی معترف

انہوں نے کہا کہ میں اور میرا برانڈ کسی بھی قسم کی نفرت آمیز گفتگو کی حمایت نہیں کرتے، میں ایسے نکتہ نظر سے وابستہ رہنے کی خواہش نہیں رکھتا اور اس کی مذمت کرتا ہوں۔

دریں اثنا بولی وڈ اداکارہ کی بہن اور منیجر رنگولی نے ڈیزائنر آنند بھوش کے تبصرے پر سخت ردعمل دیا اور انڈسٹری میں ان کی پوزیشن پر سوال اٹھایا۔

انہوں نے لکھا کہ کوئی آپ کو نہیں جانتا لہذا خود مشہور ہونے کی کوشش نہ کریں۔

تبصرے (0) بند ہیں