شمالی وزیرستان: دہشت گردوں کی فائرنگ سے پاک فوج کے دو جوان شہید

23 مئ 2022
آئی ایس پی آر کے مطابق دہشت گردوں نے میرعلی میں فائرنگ کی—فائل/فوٹو: اے ایف پی
آئی ایس پی آر کے مطابق دہشت گردوں نے میرعلی میں فائرنگ کی—فائل/فوٹو: اے ایف پی

خیبرپختونخوا کے ضلع شمالی وزیرستان کے علاقے میرعلی میں دہشت گردوں کی فائرنگ سے پاک فوج کے 2 جوان شہید ہوگئے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ ‘دہشت گردوں نے ضلع شمالی وزیرستان کے شہری علاقے میرعلی میں واقع فوجی چوکی پر فائرنگ کی’۔

مزید پڑھیں: وزیرستان: دھماکے سے پاک فوج کا سپاہی شہید، کارروائی میں دہشت گرد ہلاک

بیان میں کہا گیا کہ ‘سپاہیوں نے فوری طور پر جواب دیا اور دہشت گردوں کو اسی مقام پر مؤثر طور پر مصروف رکھا’۔

آئی ایس پی آر نے بتایا کہ ‘فائرنگ کے تبادلے کے دوران لوئر دیر سے تعلق رکھنے والے 20 سالہ سپاہی ظہور خان اور ایبٹ آباد سے تعلق رکھنے والے 23 سالہ سپاہی رحیم گل بہادری سے لڑے اور شہادت پائی’۔

بیان میں کہا گیا کہ ‘علاقے میں کلیئرنس کی کارروائی کی جارہی ہے’۔

خیال رہے کہ آئی ایس پی آر نے 19 مئی کو بھی ایک بیان میں بتایا تھا کہ جنوبی وزیرستان کے علاقے مکین میں دھماکے سے پنجاب کے ضلع جہلم سے تعلق رکھنے والے 39 سالہ حوالدار محمد سانور نے شہادت پائی۔

اس سے قبل 17 مئی 2022 کو ضلع شمالی وزیرستان کے علاقے میرعلی میں سیکیورٹی فورسز نے خفیہ اطلاع کی بنیاد پر کارروائی کی تھی جہاں دہشت گردوں سے فائرنگ کے تبادلے کے دوران ایک دہشت گرد مارا گیا تھا، جس کی شناخت محمد الطاف کے نام سے ہوئی تھی۔

یہ بھی پڑھیں: شمالی وزیرستان میں سیکیورٹی فورسز کی کارروائی، 2 انتہائی مطلوب دہشتگرد ہلاک

آئی ایس پی آر نے بتایا تھا کہ مارے گئے دہشت گرد کے قبضے سے اسلحہ اور بارود برآمد کیا گیا۔

آئی ایس پی آر نے 15 مئی کو بتایا تھا کہ شمالی وزیرستان میں سیکیورٹی فورسز کے ساتھ فائرنگ کے تبادلے میں کالعدم تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی) کے 2 اہم اور انتہائی مطلوب دہشت گرد مارے گئے ہیں۔

آئی ایس پی آر نے بتایا تھا کہ 16 اور 17 مئی کی درمیانی شب شمالی وزیرستان کے علاقے بویا میں سیکیورٹی فورسز اور دہشت گردوں کے درمیان شدید فائرنگ کا تبادلہ ہوا، فائرنگ تبادلے کے دوران ہلاک ہونے والے 2 دہشت گردوں کی شناخت کمانڈر رشید عرف جابر اور عبدالسلام عرف چمٹو کے نام سے ہوئی۔

بیان میں کہا گیا تھا کہ دہشت گردوں کے قبضے سے ہتھیار اور گولہ بارود بھی برآمد کیا گیا۔ دونوں دہشت گرد علاقے میں دہشت گردی کی کارروائیوں میں ملوث تھے۔

اس سے قبل 15 مئی کو شمالی وزیرستان کے علاقے میران شاہ کے قریب خودکش دھماکے میں پاک فوج کے 3 جوان اور 3 معصوم بچے شہید ہوگئے تھے۔

آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا تھا کہ میران شاہ میں پاک فوج کی گاڑی کے قریب خودکش حملہ آور نے خود کو دھماکے سے اڑا دیا جس کے نتیجے میں 3 جوان اور 3 معصوم بچے شہید ہوگئے۔

شہید ہونے والوں میں پاکپتن کے رہائشی 33 سالہ لانس حوالدار زبیر قادر، ہری پور کے رہائشی 21 سالہ سپاہی عذیر اسفر اور ملتان کے رہائشی 22 سالہ سپاہی قاسم مقصود شامل تھے۔

یہ بھی پڑھیں: لکی مروت: سیکیورٹی فورسز کے مشترکہ آپریشن میں 4 دہشت گرد ہلاک، ایک گرفتار

خودکش دھماکے میں شہید ہونے والے بچوں کی شناخت احمد حسان (11 سال)، احسن (8 سال) اور انعم (4 سال) کے نام سے ہوئی تھی۔

یاد رہے کہ 26 اپریل کو بھی جنوبی وزیرستان میں دہشت گردوں کی فائرنگ سے 2 جوان شہید ہوگئے تھے۔

اس سے قبل 12 اپریل کو شمالی وزیرستان کے علاقے عشام میں سیکیورٹی فورسز اور دہشت گردوں کے درمیان فائرنگ کے تبادلے کے دوران پاک فوج کا ایک جوان شہید ہوگیا تھا۔

آئی ایس پی آرکی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا تھا کہ ضلع عشام میں دہشت گردوں اور فورسز کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ ہوا اور فائرنگ کے تبادلے کے دوران میانوالی سے تعلق رکھنے والے 28 سالہ سپاہی عصمت اللہ خان نے بہادری سے لڑتے ہوئے شہادت پائی۔

قبل ازیں 30 مارچ کو ضلع ٹانک میں دہشت گردوں کے ساتھ فائرنگ کے تبادلے میں 3 سیکیورٹی اہلکار شہید اور 3 حملہ آور مارے گئے تھے۔

مزید پڑھیں: باجوڑ: سیکیورٹی فورسز کی کارروائی، 4 دہشت گرد ہلاک

آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا تھا کہ 3 دہشت گردوں نے خیبر پختونخوا کے ضلع ٹانک میں ایک ملٹری کمپاؤنڈ میں داخل ہونے کی کوشش کی، فوجیوں نے مؤثر انداز میں جوابی کارروائی کرتے ہوئے تینوں دہشت گردوں کو گھیرے میں لے کر ہلاک کر دیا اور فوجی کمپاؤنڈ میں داخلے کی کوشش کو ناکام بنا دی۔

ڈسٹرکٹ پولیس افسر (ڈی پی او) وقار احمد نے بتایا تھا کہ بھاری اسلحے سے لیس دہشت گردوں کی جانب سے سیکیورٹی فورسز کے کیمپ پر رات کو ہونے والے حملے کے بعد فائرنگ کے تبادلے میں 3 سیکیورٹی اہلکار شہید ہوئے جبکہ 3 حملہ آور مارے گئے۔

ضرور پڑھیں

تبصرے (0) بند ہیں