ڈاؤ ہسپتال میں کینسر کے مریضوں کے لیے کیموتھراپی کا آغاز

اپ ڈیٹ 28 جولائ 2022
<p>ڈاکٹر مریم نے کہا ڈاؤ ہسپتال میں کیموتھراپی کی قیمت دیگر پرائیویٹ ہسپتالوں کے مقابلے میں بہت کم ہوگی— شٹر اسٹاک فوٹو</p>

ڈاکٹر مریم نے کہا ڈاؤ ہسپتال میں کیموتھراپی کی قیمت دیگر پرائیویٹ ہسپتالوں کے مقابلے میں بہت کم ہوگی— شٹر اسٹاک فوٹو

ڈاؤ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز (ڈی یو ایچ ایس) نے اوجھا کیمپس میں کینسر کے مریضوں کے علاج کے لیے کم قیمت پر کیموتھراپی کی خدمات فراہم کرنا شروع کردی ہیں۔

ڈان اخبار کی رپورٹ کے مطابق ڈاؤ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کی ڈاکٹر مریم کا کہنا ہے کہ ڈاؤ ہسپتال میں یہ سہولت فراہم کرنا واقعی بڑی بات ہے جب کہ اس سے قبل ہم کینسر کے غریب مریضوں کو جناح پوسٹ گریجویٹ میڈیکل سینٹر اور کراچی انسٹیٹیوٹ آف ریڈیو تھراپی اینڈ نیوکلیئر میڈیسن سمیت دیگر ہسپتالوں میں ریفر کر رہے تھے۔

انہوں نے بتایا کہ ایسے خاندان جو پرائیویٹ ہسپتالوں میں مہنگا علاج کروا سکتے ہیں انہیں مختلف نجی ہسپتالوں کو ریفر کیا جا رہا تھا۔

یہ بھی پڑھیں: کیموتھراپی کے بغیر کینسر کے علاج کا انقلابی طریقہ دریافت

ڈاکٹر مریم کے مطابق ڈاؤ ہسپتال میں کیموتھراپی کی قیمت دیگر پرائیویٹ ہسپتالوں کے مقابلے میں بہت کم ہوگی۔

ڈاؤ ہسپتال میں کینسر کے مریضوں کے لیے دیگر متعلقہ خدمات کی فراہم کی سہولیات پہلے سے ہی موجود ہیں، ان خدمات میں انڈور اور آؤٹ ڈور مریضوں کے لیے خدمات کی فراہمی اور ڈے کیئر سینٹر شامل ہیں۔

مزید پڑھیں: کینسر کی 12 علامات جنھیں نظرانداز نہ کریں

ڈاؤ ہسپتال کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر زاہد اعظم نے بتایا کہ ہسپتال میں اب میڈیکل آنکولوجی خدمات مکمل ہو چکی ہیں۔

انہوں نے مزید بتایا کہ ہسپتال میں فراہم کی جانے والی ان خدمات کی نگرانی رائل کالج آف فزیشنز اینڈ سرجنز، یو کے سے سرٹیفائیڈ ماہر کے ذریعے کی جا رہی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ چھاتی اور رحم کے کینسر کے مریضوں سمیت تمام ضرورت مند مریضوں کو کیموتھراپی کی خدمات پیش کرنے کا منصوبہ ہے۔

ضرور پڑھیں

’اٹھو کاروانِ سحر آگیا‘

’اٹھو کاروانِ سحر آگیا‘

پاکستان ’قراردادِ پاکستان‘ کے بعد طلوعِ آزادی کی جس منزل سے ہم کنار ہوا اس کی داستان نسلِ نو کو سنانی ضروری ہے۔

تبصرے (0) بند ہیں