• KHI: Maghrib 7:14pm Isha 8:40pm
  • LHR: Maghrib 6:58pm Isha 8:33pm
  • ISB: Maghrib 7:08pm Isha 8:48pm
  • KHI: Maghrib 7:14pm Isha 8:40pm
  • LHR: Maghrib 6:58pm Isha 8:33pm
  • ISB: Maghrib 7:08pm Isha 8:48pm

’عوام غیر لائسنس یافتہ ڈیجیٹل قرضہ ایپلی کیشنز سے ہوشیار رہیں‘

شائع February 14, 2023
— تصویر: اسکرین گریب
— تصویر: اسکرین گریب

سیکیورٹی ایکسچینج کمیشن آف پاکستان (ایس ای سی پی) نے عوام کو غیر مجاز قرضہ ایپلی کیشنز ’منی باکس‘ اور ’منی کلب‘ کے جھانسے میں آنے سے خبردار کردیا۔

ڈان اخبار کی رپورٹ کے مطابق ایس ای سی پی کا کہنا تھا کہ یہ ایپلی کیشنز عوام کا اعتماد حاصل کرنے کے لیے لائسنس یافتہ نان بینکنگ فنانس کمپنیوں (این بی ایف سیز) کا نام استعمال کر رہی ہیں اور کسی ریگولیٹری منظوری کے بغیر قرض کی خدمات فراہم کر رہی ہیں۔

ریگولیٹر نے اپنی لائسنس یافتہ نان بینکنگ فنانس کمپنیوں قسط بازار (پرائیویٹ) لمیٹڈ اور قسط پے (پرائیویٹ) لمیٹڈ کو منی باکس اور منی کلب کے نام سے ایپلی کیشنز متعارف کرانے کی کوئی اجازت نہیں دی۔

یہ غیر مجاز سرگرمی عوام کے لیے سخت خطرے کا باعث ہیں کیوں کہ یہ ایپلی کیشنز بغیر کسی ریگولیٹری منظوری کے کام کر رہی ہیں۔

ایس ای سی پی عوام کے لیے دستیاب ایک فہرست تیار کرتی ہے جس میں لائسنس یافتہ نان بینکنگ فنانس کمپنیوں اور ڈیجیٹل قرضے دینے والی ایپلی کشنز کے نام شامل ہوتے ہیں جن کے پاس قرض فراہم کرنے کے لیے ریگولیٹر کی اجازت موجود ہے۔

عوام کو کہا گیا کہ کسی قرض دہندہ ادارے سے معاملات کرنے سے پہلے لائسنس یافتہ نان بینکنگ فنانس کمپنی کی ریگولیٹری حیثیت اور اس کی مجاز ایپلی کیشن کی تصدیق کریں۔

کارٹون

کارٹون : 24 مئی 2024
کارٹون : 23 مئی 2024