• KHI: Maghrib 7:16pm Isha 8:43pm
  • LHR: Maghrib 7:01pm Isha 8:38pm
  • ISB: Maghrib 7:11pm Isha 8:52pm
  • KHI: Maghrib 7:16pm Isha 8:43pm
  • LHR: Maghrib 7:01pm Isha 8:38pm
  • ISB: Maghrib 7:11pm Isha 8:52pm

کراچی: بارش کی پیشگوئی، وزیراعلیٰ سندھ نے رین ایمرجنسی نافذ کردی

شائع February 29, 2024
— فائل: کینوا
— فائل: کینوا

کراچی سمیت سندھ میں موسلا دھار بارش کے امکان کے پیش نظر وزیراعلیٰ مراد علی شاہ نے صوبے میں رین ایمرجنسی نافذ کردی۔

ڈان نیوز کے مطابق مراد علی شاہ نے تمام بلدیاتی اداروں، انتظامیہ اور ہسپتالوں کو ہائی الرٹ کردیا، جبکہ کل کراچی میں سرکاری اور نجی اداروں میں آدھے دن کام کے بعد چھٹی دینے کا فیصلہ بھی کیا گیا ہے۔

وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ کراچی میں دوپہر دو بجے کے بعد 3 تا 4 بارش کے اسپیل ہونے کا امکان ہے، عوام سے اپیل ہے کہ کل غیر ضروری گھروں سے نہ نکلیں۔

ریسکیو عملے کی چھٹیاں منسوخ

دوسری جانب، ڈائریکٹر جنرل سندھ ایمرجنسی ریسکیو سروس نے ریسکیو عملے کی چھٹیاں منسوخ کرنے اور مکمل حاضری یقینی بنانے کی سخت ہدایت جاری کیں۔

ڈائریکٹر جنرل سندھ ایمرجنسی ریسکیو سروس 1122 ڈاکٹر عابد جلال الدین کی زیر صدارت رین ایمرجنسی کی صورتحال سے نمٹنے کے حوالے سے اجلاس منعقد ہوا۔

ریسکیو 1122 ہیڈکوارٹر کراچی میں ایمرجنسی افسران، اسٹیشن انچارج، کمیونیکیشن افسران اور میڈیا کوارڈینیٹر نے شریک تھے، جبکہ ایمرجنسی افسر حیدرآباد و نوابشاہ، ایمرجنسی افسر لاڑکانہ، اسٹیشن انچارج سکھر، اور کمیونیکیشن افسر میرپور خاص نے بذریعہ ویڈیو لنک شرکت کی۔

ڈائریکٹر جنرل ریسکیو نے ہدایت دی کہ کراچی اور سندھ کے دیگر اضلاع بالخصوص حیدرآباد، میرپور خاص، شہید بےنظیر آباد، لاڑکانہ اور سکھر سمیت جہاں جہاں ریسکیو 1122 کی سروس بحال ہیں، وہاں عملہ اپنی حاضری یقینی بنائے۔

ڈائریکٹر جنرل ریسکیو سندھ کا کہنا تھا کہ ہر ڈسٹرکٹ کے ایمرجنسی افسر و اسٹیشن انچارج کو ہدایت دی جاتی ہے کہ مکمل طور پر ڈسٹرکٹ ایڈمنسٹریشن سے رابطے میں رہیں۔

مزید کہا کہ رین ایمرجنسی یا سیلابی صورتحال سے نمٹنے کے لیے واٹر ریسکیو وہیکل اور ریسکیو عملے کے ہمراہ تیار رہے۔

ان کا کہنا تھا کہ سندھ حکومت کے جاری کردہ رین ایمرجنسی الرٹ کے پیشِ نظر آنے والے 3 دن اہم ترین ہیں، تمام عملہ چاق و چوبند دستوں کے ساتھ اپنے متعلقہ ریسکیو اسٹیشن پر اپنے فرائض انجام دیں۔

ڈائریکٹر جنرل ریسکیو سندھ نے کہا کہ ہماری اولین ترجیح عوام الناس کی خدمت اور حفاظت ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز محکمہ موسمیات نے کراچی میں یکم مارچ کو موسلا دھار بارش کی پیش گوئی کی اور طوفانی بارشوں کے پیش نظر صوبائی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی نے الرٹ جاری کردیا تھا۔

سندھ کی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی نے اپنے بیان میں کہا تھا کہ 29 فروری سے دو مارچ تک سندھ میں طوفانی بارشیں ہوسکتی ہیں جس سے کھمبوں، فصلوں اور سولر پینلزکو نقصان پہنچا سکتا۔

چیف میٹرولوجسٹ سردار سرفراز نے ڈان نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ کراچی میں یکم مارچ کو پورا دن رات گئے تک معتدل اور تیز بارش ہوگی۔

انھوں نے یکم مارچ سے آئندہ تین سے چار روز تک شہر کا درجہ حرارت بھی گرنے کا امکان ہے۔

کارٹون

کارٹون : 29 مئی 2024
کارٹون : 28 مئی 2024