تمباکو نوشی کا ایک اور بڑا نقصان سامنے آگیا

09 مارچ 2017

ای میل

یہ انتباہ برطانیہ میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آیا— شٹر اسٹاک فوٹو
یہ انتباہ برطانیہ میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آیا— شٹر اسٹاک فوٹو

تمباکو نوشی کے نتیجے میں پھیپھڑوں کے امراض جیسے کینسر یا دیگر کا خطرہ تو سب کو معلوم ہے مگر یہ عادت بینائی کی کمزوری بلکہ اس کے خاتمے کا باعث بھی بن سکتی ہے۔

یہ انتباہ برطانیہ میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آیا۔

آئی ہیلتھ یوکے کی تحقیق کے مطابق سگریٹ نوشی کرنے والے افراد میں بینائی کی کمزوری یا اس سے محرومی کا خطرہ اس عادت سے دور رہنے والوں کے مقابلے میں 4 گنا زیادہ ہوتا ہے۔

تحقیق کے مطابق سگریٹ میں موجود کیمیکلز آنکھ میں ایسی بائیولوجیکل تبدیلیاں لاتے ہیں جو آنکھوں کے امراض جیسے عمر بڑھنے کے ساتھ نظر کی کمزوری، موتیے اور دیگر کا باعث بنتے ہیں۔

اسی طرح سگریٹ نوشی کے نتیجے میں آنکھ کی صحت متاثر ہوتی ہے اور رنگوں کو دیکھنے کی صلاحیت، پردے میں ورم اور آنکھوں کے خشک ہونے کا خطرہ بھی بڑھتا ہے۔

تحقیق میں مزید بتایا گیا کہ سگریٹ اندھے پن کا باعث بن سکتی ہے مگر اس لت میں مبتلا کروڑوں افراد کو اس کا شعور نہیں اور 10 فیصد سے بھی کم کو یہ احساس ہوتا ہے کہ تمباکو نوشی آنکھوں کی صحت پر اثرانداز ہورہی ہے۔

محققین کا کہنا تھا کہ تمباکو نوشی اور پھیپھڑوں کے کینسر کے درمیان 92 فیصد تعلق پایا جاتا ہے جبکہ اس عادت اور امراض قلب کے درمیان تعلق کی شرح 87 فیصد ہے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ اگر سگریٹ نوش اس عادت سے چھٹکارا پالیں تو وہ آنکھوں کی صحت کو بہتر اور بینائی سے محرومی کے خطرے کو نمایاں حد تک کم کرسکتے ہیں۔

ان کے بقول سگریٹ نوشی یا محض اس کا دھواں بھی آنکھوں کی صحت پر منفی انداز سے اثرانداز ہوتا ہے۔

(یہ تحقیق طبی جریدے برٹش میڈیکل جرنل میں شائع ہوئی)