فلسطین میں اسرائیلی جارحیت کےخلاف پنجاب اسمبلی میں قرارداد جمع

13 نومبر 2018

ای میل

پنجاب اسمبلی — فائل فوٹو
پنجاب اسمبلی — فائل فوٹو

پنجاب اسمبلی میں فلسطینی عوام پر اسرائیلی جارحیت کے خلاف قرارداد جمع کروا دی گئی۔

مذکورہ قرارداد پاکستان مسلم لیگ (ن) کی رکن پنجاب اسمبلی کنول لیاقت ایڈووکیٹ نے جمع کروائی۔

لیگی رہنما کی جانب سے جمع کروائی گئی قرارداد کے متن میں کہا گیا کہ اسرائیل نے غزہ میں ہمیشہ ظلم، بربریت، اسلام دشمنی کی تاریخ رقم کی ہے جو انسانیت سوزی کی بدترین مثال ہے۔

مزید پڑھیں: اسرائیلی بمباری سے مزید 3 فلسطینی جاں بحق

قرارداد میں مزید کہا گیا کہ اسرائیلی حملوں کے نتیجے میں نہتے افراد اور معصوم بچے شہید ہورہے ہیں، جس پر پنجاب اسمبلی کا ایوان اسرائیل کے ظالمانہ رویے کی بھرپور مذمت کرتا ہے۔

اسرائیلی جارحیت کے خلاف جمع کروائی گئی قرارداد میں مطالبہ کیا گیا کہ وفاقی حکومت، عالمی عدالت انصاف سے مطالبہ کرے کہ اسرائیل کو فلسطینیوں کے خلاف انسانیت سوز کارروائیوں سے باز رہنے کی تنبیہ کی جائے، بصورت دیگر اسرائیل کے خلاف سخت تادیبی کارروائی کی جائے۔

خیال رہے کہ منگل کے روز اسرائیلی فوج کی غزہ پر بمباری سے مزید تین فلسطینی جاں بحق ہوگئے تھے جس کے بعد 24 گھنٹوں کے دوران جاں بحق فلسطینیوں کی تعداد 10 ہوگئی تھی۔

غزہ میں اسرائیلی قبضے کے خلاف 30 مارچ سے شروع ہونے والے مظاہروں میں اسرائیلی فوجیوں کی فائرنگ سے تقریباً 200 فلسطینی جاں بحق اور 21 ہزار 600 مظاہرین زخمی ہوچکے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: غزہ: اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے 2 فلسطینی جاں بحق

اسرائیل نے سرحد کو بند کرکے غزہ کو دنیا سے منقطع کر رکھا ہے اور اس کا موقف ہے کہ حماس کو تنہا کرنے کے لیے یہ بہت ضروری ہے، جبکہ 2008 سے اب تک اسرائیل اور حماس کے درمیان 3 جنگیں بھی ہوئی ہیں۔

فلسطینی مسلمانوں کے خلاف اسرائیلی جارحیت سے متعلق انسانی حقوق کی تنظیموں کا کہنا ہے کہ اس طرح کے اقدامات سے علاقے میں رہائش پذیر 20 لاکھ افراد کو سزا دی جارہی ہے۔