کامران اکمل کی سنچری، پشاور زلمی کی پی ایس ایل میں پہلی فتح

اپ ڈیٹ 22 فروری 2020

ای میل

کامران اکمل نے صرف 20 گیندوں پر نصف سنچری مکمل کی— فوٹو بشکریہ پشاور زلمی
کامران اکمل نے صرف 20 گیندوں پر نصف سنچری مکمل کی— فوٹو بشکریہ پشاور زلمی
شین واٹسن لگاتار دوسرے میچ میں بڑی اننگز کھیلنے میں ناکام رہے— فوتو بشکریہ پشاور زلمی
شین واٹسن لگاتار دوسرے میچ میں بڑی اننگز کھیلنے میں ناکام رہے— فوتو بشکریہ پشاور زلمی

پاکستان سپر لیگ کے چوتھے میچ میں پشاور زلمی نے کامران اکمل کی عمدہ بیٹنگ کی بدولت دفاعی چیمپیئن کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو 6وکٹوں سے شکست دے دی۔

گلیڈی ایٹرز نے پشاور زلمی کی دعوت پر بیٹنگ کا آغاز کیا تو جیسن روئے اور شین واٹسن نے اننگز کی شروعات کیں۔

شین واٹسن لگاتار دوسرے میچ میں کوئی خاطر خواہ کھیل پیش کرنے میں ناکام رہے اور 8رنز بنانے کے بعد پویلین لوٹ گئے۔

احمد شہزاد نے لیام ڈاسن کو چھکا لگا کر خطرناک عزائم ظاہر کرنے کی کوشش کی لیکن نوجوان محمد عامر خان نے ٹام بینٹن کی مدد سے ان کی 12رنز کی اننگز کا خاتمہ کردیا۔

اس کے بعد جیسن روئے کا ساتھ دینے کپتان سرفراز احمد آئے اور کپتان نے وکٹ پر آتے ہی تیزی سے رنز بنانے کا سلسلہ شروع کیا۔

انہوں نے اپنی ٹیم کو مشکلات سے نکالتے ہوئے جیسن روئے کے ہمراہ 62رنز کی شراکت قائم کی جس میں سرفراز کا حصہ 41 رنز کا رہا لیکن اپنے ہم منصب ڈیرن سیمی کی پہلی گیند پر چوکا لگانے کے بعد اگلے گیند پر ٹام بینن کو کیچ دے بیٹھے۔

سرفراز احمد کے آؤٹ ہونے کے بعد روئے کی وکٹ پر موجودگی کے باوجود گلیڈی ایٹرز کو رنز بنانے میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑا اور وہ اختتامی اوورز میں زیادہ تیزی سے رنز نہ بنا سکے۔

گزشتہ میچ میں نصف سنچری بنانے والے اعظم خان اس مرتبہ ناکام رہے اور وہاب ریاض نے وکٹیں بکھیر کر ان کی 5رنز کی اننگز کے آگے فل اسٹاپ لگا دیا جبکہ اگلے اوور میں محمد نواز بھی پویلین لوٹ گئے۔

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے مقررہ اوورز میں 5وکٹوں کے نقصان پر 148رنز بنائے، جیسن روئے 73رنز بنا کر ناقابل شکست رہے۔

پشاور زلمی کے باؤلرز نے شاندار نپی تلی باؤلنگ کا مظاہرہ کیا اور کسی بھی موقع پر حریف ٹیم کو کھل کر کھیلنے کا موقع فراہم نہیں کیا۔

وہاب ریاض 2وکٹیں لے کر سب سے کامیاب باؤلر رہے جبکہ راحت علی، محمد عامر خان اور ڈیرن سیمی نے ایک، ایک وکٹ حاصل کی۔

ہدف کے تعاقب میں کامران اکمل نے جارحانہ انداز اپنایا اور محمد نواز کی جانب سے کرائے گئے پہلے ہی اوور میں 21 رنز بٹورے۔

انہوں نے سہیل خان کے خلاف بھی جارحانہ بیٹنگ جاری رکھی لیکن دوسرے اینڈ پر موجود ٹام بینٹن برا شاٹ کھیلنے کی کوشش میں ٹائمل ملز کی وکٹ بن گئے۔

کامران اکمل نے شاندار جارحانہ بیٹنگ کرتے ہوئے صرف 20گیندوں پر نصف سنچری مکمل کی۔

اس کے بعد کامران اکمل اک ساتھ دینے حیدر علی آئے اور دونوں نے دوسری وکٹ کے لیے 82رنز کی شراکت قائم کی، حیدر 25رنز بنانے کے بعد آؤٹ ہوئے جبکہ شعیب ملک بھی صرف 7رنز بنا سکے۔

دوسرے اینڈ سے کامران اکمل نے بہترین کھیل کا مظاہرہ جاری رکھتے ہوئے پاکستان سپر لیگ میں اپنی تیسری سنچری اسکور کی۔

کامران اکمل نے عمدہ بیٹنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے 55 گیندوں پر 4 چھکوں اور 13چوکوں کی مدد سے 101رنز کی اننگز کھیلی اور وہ فواد احمد کی وکٹ بنے۔

لیام لیانگسٹن نے فواد احمد کو چھکا لگا کر پشاور زلمی کو 9گیندوں قبل ہی میچ میں 6وکٹ کی فتح سے ہمکنار کرا دیا۔

میچ کے لیے دونوں ٹیمیں ان کھلاڑیوں پر مشتمل تھیں۔

پشاور زلمی: ڈیرن سیمی(کپتان)، کامران اکمل، ٹام بینٹن، حیدر علی، شعیب ملک، لیام لیونگسٹن، وہاب ریاض، لیام ڈاسن، حسن علی، راحت علی اور عامر خان

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز: سرفراز احمد(کپتان)، جیسن روئے، چین واٹسن، احمد شہزاد، احسن علی، اعظم خان، محمد نواز، سہیل خان، محمد حسنین، فواد احمد اور ٹائمل ملز

روایتی حریف

دونوں ٹیمیں پاکستان سپر لیگ کی روایتی حریف تصور کی جاتی ہیں اور کئی مواقعوں پر دونوں ٹیموں کے درمیان کانٹے دار مقابلے دیکھنے کو ملے جس میں کبھی گلیڈی ایٹرز کامیاب رہے اور کبھی فتح نے پشاور زلمی کے قدم چومے۔

اب تک دونوں ٹیموں کے درمیان اب تک 13 میچ کھیلے گئے جس میں سے 7 میں گلیڈی ایٹرز کامیاب رہے جبکہ پانچ میں پشاور زلمی نے فتح حاصل کی، ایک میچ بارش کی نذر ہو گیا۔

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے افتتاحی میچ میں اسلام آباد یونائیٹڈ کو 3وکٹوں سے شکست دی تھی۔

دوسری جانب پشاور زلمی کو لیگ میں اپنے افتتاحی میچ میں ناکامی کا سامنا کرنا پڑا تھا اور کراچی کنگز نے انہیں سنسنی خیز مقابلے کے بعد 10رنز سے مات دی تھی۔