'عشقیہ' اور 'پیار کے صدقے' کے نشرِِ مکرر پر پابندی

اپ ڈیٹ 04 ستمبر 2020

ای میل

یہ پابندی پیمرا آرڈیننس کے سیکشن 27  کے تحت لگائی گئی—اسکرین شاٹ
یہ پابندی پیمرا آرڈیننس کے سیکشن 27 کے تحت لگائی گئی—اسکرین شاٹ

پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی (پیمرا) نے 'سماجی اور مذہبی اقدار' کے منافی مواد نشر کرنے پر ڈراما سیریل 'عشقیہ' اور 'پیار کے صدقے' کے نشر مکرر پر پابندی عائد کردی۔

یہ پابندی پیمرا آرڈیننس کے سیکشن 27 کے تحت نجی ٹی وی چینل اے آر وائے کے ڈرامے 'عشقیہ' اور ہم ٹی وی کے ڈرامے 'پیار کے صدقے' پر لگائی گئی۔

پیمرا نے دونوں ڈراموں کی نہ صرف اے آر وائے ڈیجیٹل، ہم ٹی وی بلکہ اور اے آر وائے زندگی اور ہم ستارے پر بھی نشر مکرر پر پابندی لگائی ہے۔

مزید پڑھیں: ڈراما ’جلن‘ میں بہنوئی و سالی کی محبت دکھانے پر لوگ برہم

پریس ریلیز کے مطابق پیمرا نے اے آر وائے کو ڈراما سیریل 'جلن' کے خلاف موصول ہونے والی شکایات پر ڈرامے کے مواد کا جائزہ لینے کا بھی حکم دیا۔

ساتھ ہی چینل کو خبردار کیا گیا کہ مذکورہ ڈرامے کے حوالے سے مزید شکایات موصول ہونے یا ڈرامے کے اسکرپٹ کو پاکستانی اقدار کے مطابق نہ بنایا گیا تو بصورت دیگر اس پر بھی پیمرا آرڈیننس کے سیکشن 27 کے تحت کارروائی کی جائے گی۔

اعلامیے کے مطابق ناظرین کی جانب سے ڈراموں میں دکھائے جانے والے بالخصوص مرکزی خیال پر تنقید کی جارہی ہے اور ناظرین میں مقدس رشتوں کی پامالی سے متعلق مواد نشر کرنے پر شدید اضطراب پایا جاتا ہے۔

پیمرا نے کہا کہ ناظرین کی بنیاد پر پاکستان سٹیزن پورٹل اور پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی کے سوشل میڈیا اکاؤنٹس اور پیمرا کال سینٹر پر متعدد شکایات درج کرراہے ہیں۔

پریس ریلیز میں کہا گیا کہ پیمرا متعلقہ چینلز کو بارہا ان ڈراموں سے متعلق ناظرین کے تحفظات سے آگاہ کرچکا ہے اور پیمرا کی جانب سے ڈراموں میں نشر کیے جانے والے مواد کو معاشرتی، مذہبی، سماجی اور اخلاقی اقدار کے مطابق بنانے کی ہدایت کی گئی تھی ۔

مزید کہا گیا کہ چینلز کی جانب سے ڈراموں کی اسکرپٹ میں بہتری نہ ہونے پر 18 اگست کو بھی ہدایت نامہ جاری کیا گیا تھا اور ڈراموں کا مواد پاکستان کے اقدار کے مطابق بنانے کی حتمی ہدایت کی تھی۔

یہ بھی پڑھیں: ‘بلال اور یمنیٰ انڈسٹری کے اگلے فواد اور ماہرہ ہیں‘

پیمرا کی جانب سے تمام ٹی وی چینلز، میڈیا ہاؤسز اور پروڈکشن ہاؤسز کو ڈراموں میں نشر ہونے والے مواد کا جائزہ لینے کی ہدایت کی گئی ہے۔

ساتھ ہی خبردار کیا گیا ہے کہ ڈرامے کی تیاری میں سرمایہ اور وقت صرف ہونے سے قطع نظر اگر اس کا مواد ملکی اقدار کے منافی اور ناظرین کی توقعات کے برعکس ہوا تو کسی وارننگ کے بغیر ڈرامے پر پابندی عائد کی جائے گی۔

پیمرا نے تمام اسٹیک ہولڈرز سے فی الفور مستقبل میں بننے والے ڈراموں کے مواد پر نظرثانی کرنے کا بھی کہا ہے۔