انسانی دماغ کی طرح کام کرنے والا انوکھا ٹی وی

09 جنوری 2021

ای میل

— فوٹو بشکریہ سونی
— فوٹو بشکریہ سونی

سونی کو بہترین ٹیلیویژن تیار کرنے کے حوالے سے جانا جاتا ہے۔

اب اس کمپنی نے ایسا ٹی وی تیار کیا ہے جو انسانی دماغ کی نقل کرکے اسکرین میں مناظر کی تصویر اور آواز اصل زندگی جیسا دکھانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

اس ٹی وی میں ایک آرٹی فیشل انٹیلی جنس پر کام کرنے والا پراسیسر موجود ہے، جس کے بارے میں کمپنی کا کہنا ہے کہ وہ تصاویر کو ایسے ہی پراسیس کرتا ہے جس طرح انسانی دماغ۔

سونی براویا کے اس نئے براویا ایکس آر ایل ای ڈی اور او ایل ای ڈی ٹی وی میں کاگنیٹو پراسیسر ایکس آر دیا گیا ہے۔

سونی کے مطابق یہ نیا پراسیسر ایڈوانس اے آئی ٹیکنالوجی استعمال کرتا ہے اور یہ سمجھنے کی صلاحیت رکھتا ہے کہ انسان کس طرح دیکھتے اور سنتے ہیں اور اس کے مطابق ٹی وی پر تصاویر اورر ساؤنڈ کو ایڈجسٹ کرتا ہے۔

کمپنی نے بتایا کہ انسانی دماغ لاشعوری طور پر کسی چیز کو دیکھتے ہوئے مخصوص نکات پر توجہ مرکوز کرتا ہے، تاکہ مکمل تصویر کو اسکرین اور اس کے مختلف عناصر کو تجزیہ بیک وقت کرسکے۔

فوٹو بشکریہ سونی
فوٹو بشکریہ سونی

اس ٹی وی کا پراسیسر بھی کچھ ایسے ہی کام کرکے مناظر کو حقیقی زندگی جیسا بناتا ہے۔

سونی کا یہ نیا ٹی وی 11 جنوری کو لاس ویگاس میں شروع ہونے والی سی ای ایس ٹیکنالوجی نمائش میں پیش کیے جائیں گے۔

کمپنی کا دعویٰ ہے کہ یہ دنیا کا پہلا اے آئی پراسیسر سے لیس ٹی وی ہے جو دیکھنے والوں کو بالکل منفرد تجربہ فراہم کرے گا۔

اس وقت کمپنیوں کی جانب سے ٹی وی کی امیج ٹیکنالوجی کو بہترین بنانے کے لیے ایل ای ڈی اور او ایل ای ڈی اجزا کو بہتر بنانے پر توجہ مرکوز کی جارہی ہے مگر سونی نے اے آئی ٹیکنالوجی کو اس مقصد کے لیے استعمال کیا ہے۔

کمپنی کے مطابق اس پراسیسر سے ٹی وی کی 8 کے پرفارمنس کو بھی مدد ملے گی۔

نئے ٹی وی میں گوگل ٹی وی کو بلٹ ان آپریٹنگ سسٹم کے طور پر دیا جائے گا جبکہ ہینڈز فری گوگل اسسٹنٹ اور ایمیزون ایلکسا سپورٹ بھی موجود ہوگی۔

اسی طرح ایچ ڈی ایم آئی 2.1 سپورٹ بھی دی گئی ہے جس کی بدولت گیمنگ کنسولز کو 4 کے سپورت مل سکے گی۔

سونی کی جانب سے نئے ٹی وی کی قیمت یا دستیابی کی تاریخ کا اعلان نہیں کیا گیا ہے۔