• KHI: Maghrib 7:22pm Isha 8:51pm
  • LHR: Maghrib 7:08pm Isha 8:47pm
  • ISB: Maghrib 7:19pm Isha 9:02pm
  • KHI: Maghrib 7:22pm Isha 8:51pm
  • LHR: Maghrib 7:08pm Isha 8:47pm
  • ISB: Maghrib 7:19pm Isha 9:02pm

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز 73 رنز پر ڈھیر، پی ایس ایل 2021 میں سفر تمام

شائع June 17, 2021
میچ میں شاندار فتح کے بعد ملتان سلطانز کے شاہنشواز دھانی، عمران طاہر اور شان مسعود کا ایک انداز— فوٹو: پی ایس ایل
میچ میں شاندار فتح کے بعد ملتان سلطانز کے شاہنشواز دھانی، عمران طاہر اور شان مسعود کا ایک انداز— فوٹو: پی ایس ایل
شان مسعود نے عمدہ بیٹنگ کرتے ہوئے 73 رنز کی اننگز کھیلی— فوٹو: پی ایس ایل
شان مسعود نے عمدہ بیٹنگ کرتے ہوئے 73 رنز کی اننگز کھیلی— فوٹو: پی ایس ایل

پاکستان سپر لیگ(پی ایس ایل) کے چھٹے ایڈیشن میں ملتان سلطانز نے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو 110 رنز سے شکست دے کر ایونٹ میں ان کے سفر کا خاتمہ کردیا۔

ابوظبی میں کھیلے گئے لیگ کے 25ویں میچ میں گلیڈی ایٹرز کے کپتان سرفراز احمد نے ٹاس جیت کر ملتان سلطانز کو بیٹنگ کی دعوت دی۔

سلطانز نے اننگز کا آغاز کیا تو اوپنرز نے انہیں 72 رنز کا شاندار آغاز فراہم کیا، گزشتہ میچوں کے برعکس محمد رضوان کچھ بجھے بجھے نطر آئے اور 23 گیندوں پر 21 رنز بنانے کے بعد آؤٹ ہو گئے۔

صہیب مقصود اس مرتبہ بڑی اننگز کھیلنے میں ناکام رہے اور افغان اسپنر ظاہر خان کی وکٹ بن گئے۔

دوسرے اینڈ سے شان مسعود نے عمدہ بیٹنگ کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے نصف سنچری مکمل کی اور تیسری وکٹ کے لیے 37 رنز کی ساجھے داری قائم کی لیکن اس مرحلے پر حسان خان کو دو چھکے لگانے کے بعد تیسرا بڑا شاٹ کھیلنے کی کوشش میں شان مسعود باؤنڈری پر آسان کیچ دے بیٹھے، انہوں نے 42 گیندوں پر 73 رنز کی اننگز کھیلی۔

جنوبی افریقی بلے باز رائلی روسو کا بھی وکٹ پر قیام مختصر رہا اور وہ صرف دو رنز بنا کر چلتے بنے۔

اس موقع پر جانسن چالرس اور خوشدل شاہ نے پانچویں وکٹ کے لیے تیز رفتاری سے رنز اسکور کرتے ہوئے 42 رنز کی شراکت قائم کی، جانسن چارلس نے 24 گیندوں پر 47 رنز بنائے جس میں دو چھکے اور 5 چوکے شامل تھے۔

ملتان سلطانز نے مقررہ اوورز میں 5 وکٹوں کے نقصان پر 183 رنز بنائے، گلیڈی ایٹرز کی جانب سے خرم شہزاد دو وکٹیں لے کر سب سے کامیاب باؤلر رہے۔

ہدف کے تعاقب میں گلیڈی ایٹرز کے لیے اوپنرز نے اننگز کی سب سے بڑی 27 رنز کی شراکت قائم کی، عمران خان نے جیک ویدرلڈ کو آؤٹ کر کے اپنی ٹیم کو پہلی کامیابی دلائی اور ایک گیند بعد ہی کیمرون ڈیلپورٹ کا بھی کام تمام کردیا۔

اس کے بعد وکٹیں گرنے کا ایسا سلسلہ شروع ہوا جو پھر تھم نہ سکا اور گلیڈی ایٹرز یکے بعد دیگرے وکٹیں گنواتے رہے۔

عثمان خان وکٹوں کے درمیان غلط فہمی کے نتیجے میں رن آؤٹ ہوئے جبکہ اعظم خان صرف 2 رنز ہی بنا سکے۔

اس موقع پر تمام تر امیدیں کپتان سرفراز احمد سے وابستہ تھیں لیکن وہ بھی 13 رنز بنا کر سہیل تنویر کو وکٹ دے بیٹھے جبکہ نواز نے بھی رن آؤٹ ہو کر ڈگ آؤٹ کی راہ لی۔

اس کے بعد عمران طاہر نے عمدہ اسپیل کرتے ہوئے تین وکٹیں اپنے نام کیں اور گلیڈی ایٹرز کی پوری ٹیم پی ایس ایل میں اپنے کم ترین اسکور 73 رنز پر ڈھیر ہو گئی۔

ملتان سلطانز نے میچ میں 110 رنز کے بھاری مارجن سے فتح حاصل کر کے اپنی اوسط کو بہت بہتر بنا لیا جبکہ اس شکست کے ساتھ ہی گلیڈی ایٹرز ٹورنامنٹ سے باہر ہو گئے ہیں۔

شان مسعود کو ان کی عمدہ بیٹنگ پر میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔

یاد رہے کہ میچ کے لیے دونوں ٹیموں میں ایک، ایک تبدیلی کی گئی اور گلیڈی ایٹرز نے ظہور خان کی جگہ ظاہر خان جبکہ سلطانز نے شیمرون ہٹمائر کی جگہ جانسن چارلس کو فائنل الیون کا حصہ بنایا تھا۔

میچ کے لیے دونوں ٹیمیں ان کھلاڑیوں پر مشتمل تھیں۔

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز: سرفراز احمد(کپتان)، جیک ویدرلڈ، کیمرون ڈیلپورٹ، عثمان خان، اعظم خان، محمد نواز، حسان خان، عثمان شنواری، ظاہر خان، خرم شہزاد اور محمد حسنین۔

ملتان سلطانز: محمد رضوان(کپتان)، شان مسعود، صہیب مقصود، رائلی روسو، جانسن چارلس، خوشدل شاہ، سہیل تنویر، بلیسنگ مزربانی، شاہنواز دھانی، عمران خان اور عمران طاہر۔

کارٹون

کارٹون : 12 جون 2024
کارٹون : 11 جون 2024