• KHI: Asr 5:19pm Maghrib 7:21pm
  • LHR: Asr 5:01pm Maghrib 7:04pm
  • ISB: Asr 5:10pm Maghrib 7:14pm
  • KHI: Asr 5:19pm Maghrib 7:21pm
  • LHR: Asr 5:01pm Maghrib 7:04pm
  • ISB: Asr 5:10pm Maghrib 7:14pm

وزیر اعلیٰ بلوچستان کے عہدے سے استعفیٰ نہیں دیا، جام کمال خان کی وضاحت

شائع October 3, 2021
وزیر اعلیٰ کا یہ اعلان بی اے پی میں سنگین اختلافات کے بعد سامنے آیا ہے — فائل فوٹو / ڈان
وزیر اعلیٰ کا یہ اعلان بی اے پی میں سنگین اختلافات کے بعد سامنے آیا ہے — فائل فوٹو / ڈان

وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے صوبے کی حکمراں جماعت بلوچستان عوامی پارٹی (بی اے پی) کے صدر کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا۔ ہے تاہم انہوں نے واضح کیا ہے کہ وہ وزیراعلیٰ کے عہدے سے استعفیٰ نہیں دیا۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں وزیر اعلیٰ نے اعلان کیا کہ 'میں نے آج صدر بی اے پی کا عہدہ چھوڑ دیا ہے'۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ 'تین سال کے دوران پارٹی کو بہترین انداز میں چلایا'۔

جام کمال خان نے پارٹی کے چیف آرگنائزر میر جان محمد خان جمالی اور سیکریٹری جنرل سینیٹر منظور احمد کاکڑ سے درخواست کی کہ جلد از جلد پارٹی کے نئے انتخابات کروائے جائیں۔

مزید پڑھیں: بلوچستان کابینہ میں اختلافات شدت اختیار کرگئے، وزیر سے قلمدان واپس لے لیا گیا

انہوں نے کہا کہ میرے لیے سیٹ یا عہدے کی کبھی اہمیت نہیں رہی، پہلے دن سے بلوچستان عوامی پارٹی کے لیے کام کیا ہے اور مزید بھی کام کروں گا۔

بعدازاں اپنی ایک ٹوئٹ نے جام کمال خان نے وضاحت کی انہوں نے وزیر اعلیٰ کے عہدے سے استعفیٰ نہیں دیا ہے۔

خیال رہے کہ وزیر اعلیٰ کا یہ اعلان بی اے پی میں سنگین اختلافات کے بعد سامنے آیا ہے۔

حکمراں جماعت کے ایک درجن سے زائد ارکان اسمبلی نے موجودہ وزیر اعلیٰ سے استعفیٰ دینے کا مطالبہ کیا تھا۔

واضح رہے کہ جام کمال 2018 میں عام انتخابات سے قبل وجود میں آنے والی بلوچستان عوامی پارٹی کے پہلے صدر منتخب ہوئے تھے۔

کارٹون

کارٹون : 24 جولائی 2024
کارٹون : 23 جولائی 2024