میزبان اور اسٹینڈ اپ کامیڈین تابش ہاشمی نے انکشاف کیا ہے کہ مزاح کرنے اور لوگوں کو ہنسانے پر بعض افراد ان پر سماج میں فحاشی پھیلانے کا الزام لگاتے ہوئے ماں، بہن، بیوی اور بچوں کو غلیظ گالیاں دیتے ہیں۔

تابش ہاشمی نے حال ہی میں ایک پوڈکاسٹ میں شرکت کی، جہاں انہوں نے اپنے کیریئر سے متعلق کھل کر بات کی۔

انہوں نے بتایا کہ انہیں اسٹینڈ اپ کامیڈی کرنے سمیت اسکرین پر خوبصورت مزاحیہ پروگرام کرنے پر فخر ہے، کیوں کہ ان کا پروگرام دیکھ کر لاکھوں لوگ ہنستے ہیں۔

ان کے مطابق انہیں کئی مداح بتاتے ہیں کہ ان کے والدین کئی سال سے نہیں ہنسے تھے لیکن ان کا پروگرام دیکھ کر ہنسے۔

تابش ہاشمی کا کہنا تھا کہ کچھ عرصہ قبل ایک مداح نے انہیں بتایا کہ ان کی والدہ کینسر کی مریضہ ہیں اور وہ تین سال بعد پہلی بار ان کا مزاحیہ پروگرام ’ہنسنا منع ہے‘ دیکھ کر ہنسی۔

انہوں نے مزید بات کرتے ہوئے بتایا کہ حال ہی میں امریکا کے 12 مختلف شہروں میں اسٹینڈ اپ کامیڈی پروگرام کرنے گئے، وہاں متعدد مداحوں نے گھر چل کر اپنے بیمار والدین سے ملنے کی درخواست کی۔

ان کا کہنا تھا کہ امریکا میں متعدد افراد نے انہیں بتایا کہ ان کے والدین ان کا پروگرام دیکھ کر نہ صرف ہنستے ہیں بلکہ وہ پرسکون بھی رہتے ہیں اور انہیں نیند آجاتی ہے۔

تابش ہاشمی کا کہنا تھا کہ انہیں جب اتنے سارے مداحوں کی محبت ملتی ہے تو وہ منفی باتیں کرنے والوں کی طرف توجہ نہیں دیتے۔

انہوں نے اعتراف کیا کہ نفرت کرنے والے افراد سے محبت کرنے والے مداح زیادہ ہیں لیکن پھر بھی بعض مرتبہ منفی باتیں کرنے والوں کے کمنٹس ان کے لیے تکلیف کا باعث بنتے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ بعض تنگ ذہن افراد ان کے مزاح پر فحاشی کا الزام لگاتے ہوئے انہیں اور اہل خانہ کو دھمکیاں دیتے ہیں کہ ان کے ساتھ ایسا ہوگا، ویسا ہوگا۔

ٹی وی میزبان کا کہنا تھا کہ لوگ فحاشی پھیلانے کا الزام لگاتے ہوئے انہیں بہنوں کی ریپ سمیت اہلیہ اور والدہ سے متعلق غلیظ گالیاں دیتے ہیں۔

انہوں نے افسردہ ہوتے ہوئے کہا کہ انہیں بعض اوقات غلیظ گالیاں دینے والے افراد کے کمنٹس پڑھ کر انہیں تکلیف ہوتی ہے۔

ضرور پڑھیں

تبصرے (0) بند ہیں