• KHI: Asr 5:16pm Maghrib 7:24pm
  • LHR: Asr 5:00pm Maghrib 7:10pm
  • ISB: Asr 5:10pm Maghrib 7:21pm
  • KHI: Asr 5:16pm Maghrib 7:24pm
  • LHR: Asr 5:00pm Maghrib 7:10pm
  • ISB: Asr 5:10pm Maghrib 7:21pm

وزیراعظم شہباز شریف کا تہران میں ایرانی صدر ابراہیم رئیسی کے انتقال پر اظہارِ تعزیت

شائع May 22, 2024
وزیراعظم تعزیتی ہال گئے جہاں انہوں نے ایرانی صدر اور رفقا کےجاں بحق ہونے پر ایرانی حکام سے اظہار تعزیت کیا—فوٹو:ڈان نیوز
وزیراعظم تعزیتی ہال گئے جہاں انہوں نے ایرانی صدر اور رفقا کےجاں بحق ہونے پر ایرانی حکام سے اظہار تعزیت کیا—فوٹو:ڈان نیوز
وزیراعظم تعزیتی ہال گئے جہاں انہوں نے ایرانی صدر اور رفقا کےجاں بحق ہونے پر ایرانی حکام سے اظہار تعزیت کیا—فوٹو:ڈان نیوز
وزیراعظم تعزیتی ہال گئے جہاں انہوں نے ایرانی صدر اور رفقا کےجاں بحق ہونے پر ایرانی حکام سے اظہار تعزیت کیا—فوٹو:ڈان نیوز
فائل فوٹو: ڈان
فائل فوٹو: ڈان
فائل فوٹو: ایکس
فائل فوٹو: ایکس

وزیر اعظم شہباز شریف نے ایرانی صدر ابراہیم رئیسی، وزیر خارجہ حسین امیر عبد اللہیان و دیگر حکام کی ہیلی کاپٹر حادثے میں موت پر ایران کے شہر تہران میں تعزیتی تقریب میں شرکت کی اور تعزیت کا اظہار کیا ہے۔

وزیراعظم دفتر کی جانب سے جاری پریس ریلیز کے مطابق شہباز شریف کے ہمراہ نائب وزیراعظم و وزیر خارجہ اسحٰق ڈار، وفاقی وزیر داخلہ سید محسن رضا نقوی، وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات عطا اللہ تارڑ اور وزیر اعظم کے معاون خصوصی طارق فاطمی بھی ہیں۔

تہران پہنچنے کے بعد وزیراعظم تعزیتی ہال گئے جہاں انہوں نے ایرانی صدر اور رفقا کے جاں بحق ہونے پر ایرانی حکام سے اظہار تعزیت کیا۔

بعد ازاں وزیر اعظم شہباز شریف نے ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ سید علی خامنہ ای سے ملاقات کی اور مرحوم صدر ڈاکٹر ابراہیم رئیسی اور دیگر کی شہادت پر تعزیت کا اظہار کیا۔

وزیراعظم نے پاکستانی عوام اور حکومت کی جانب سے صدر رئیسی کی خدمات کو خراج عقیدت پیش کیا۔

وزیراعظم ایران کے قائم مقام صدر ڈاکٹر محمد مخبر سے بھی ملاقات کریں گے اور پاکستان کے عوام اور حکومت کی جانب سے تعزیت کا اظہار کریں گے۔

حادثے کا پسِ منظر

یاد رہے کہ ایرانی صدر ابراہیم رئیسی کو لے جانے والا ہیلی کاپٹر 19 مئی کو آذربائیجان کی سرحد پر ڈیم کی افتتاحی تقریب سے واپس آتے ہوئے موسم کی خرابی کے باعث گر کر تباہ ہو گیا جس کے نتیجے میں ایرانی صدر، وزیر خارجہ حسین امیر عبد اللہیان و دیگر حکام جاں بحق ہوگئے تھے۔

ایرانی حکام نے 20مئی صبح ایرانی صدر اور وزیر خارجہ سمیت دیگر کی موت کی تصدیق کی تھی۔

ہیلی کاپٹر میں 9 افراد سوار تھے، جن میں صدر ابراہیم رئیسی، وزیر خارجہ امیر عبداللہیان، مشرقی آذربائیجان کے گورنر مالک رحمتی، تبریز کے امام سید محمد الہاشم،صدر کے سکیورٹی یونٹ کے کمانڈر سردار سید مہدی موسوی، باڈی گارڈ اور ہیلی کاپٹر کا عملہ موجود تھے۔

کارٹون

کارٹون : 20 جون 2024
کارٹون : 17 جون 2024