عثمان جامعی
پاکستان کی قومی لفظیات

پاکستان کی قومی لفظیات

لاکھ اختلاف کے باوجود ہمارے سیاسی رہنما اقتدار اور حزب اختلاف میں آتے جاتے خاموشی کیساتھ ایک دوسرے سےان لفظوں کا تبادلہ کرلیتےہیں اپ ڈیٹ 13 جون 2022 02:45pm
خبر لیجے زباں ‘پھسلی’

خبر لیجے زباں ‘پھسلی’

زبان پھسلنے کا مقابلہ ہو تو عمران خان یہ عالمی کپ بھی جیت لیں۔ ہمارا حسن ظن ہےکہ اتنا تو وہ خود نہیں پھسلےجتنی انکی زبان پھسلتی ہے شائع 18 مارچ 2022 06:33pm
ادب کا مطالعہ کیوں ضروری ہے؟

ادب کا مطالعہ کیوں ضروری ہے؟

یہ نکتہ سمجھنا بھی ضروری ہے کہ زبان ادب کی گِرہیں کھولتی ہے اور ادب زبان کے اسرار و رموز کے در وا کرتا ہے۔ شائع 03 جنوری 2022 09:55am
’گلاب‘ کیوں نہ آیا؟ ہم سے سُنیے

’گلاب‘ کیوں نہ آیا؟ ہم سے سُنیے

’تمہاری بات دل کو لگی، چلو تباہی نہیں پھیلاتا، سمندر میں سفر کرتے تھک گیا ہوں، سوچ رہا ہوں اب سمندر چھوڑ کر کراچی میں بس جاؤں۔‘ شائع 06 اکتوبر 2021 10:53am
وہ جشن آزادی۔ ۔ ۔

وہ جشن آزادی۔ ۔ ۔

پتا نہیں پاکستان سے وہ خاموش محبت کرنے والے زیادہ محب وطن تھے یا یہ سماعتیں پاش پاش کرکے اپنی وطن پرستی کا اعلان کرنے والے! شائع 14 اگست 2021 02:07pm
قربانی کے جانوروں کا ایک مکالمہ

قربانی کے جانوروں کا ایک مکالمہ

بی بی گائے! تم دونوں کی کھالیں تو یکجا نہیں ہوسکتیں، تمہیں خرید کر لانے والا جماعت اسلامی کا ہے اور بیل انکل کا مالک ایم کیوایم کا شائع 22 جولائ 2021 10:46am
اخلاق احمد: تنہائیوں کا نوحہ گر

اخلاق احمد: تنہائیوں کا نوحہ گر

صحافت سے وابستہ رہنے اور زندگی کی تلخی سے بھری کہانیاں لکھنے کا عمل جھیلنےکے باوجود وہ نہ کھردرےہوئےنہ تلخ،بلکہ سرتاپا محبت ہی رہے اپ ڈیٹ 01 جولائ 2021 04:24pm
کون تھیں قمر زمانی؟

کون تھیں قمر زمانی؟

دلگیر کو پوری طرح اپنے عشق کا اسیر کرنے کےبعد قمر زمانی نے وہ فرمائش کر ہی ڈالی جس کیلئے وہ وجود میں آئی تھیں، یعنی 'نقاد' کا اجرا شائع 29 اپريل 2021 10:00am
’نیا پاکستان بھی کَھپّے‘

’نیا پاکستان بھی کَھپّے‘

تو بات یہ ہے کہ سیاست میں سینے سے لگانا، گلےلگانا اور پھر یوں ہی لگےلگے چونا لگانا عام سی بات ہے۔ ایسی باتوں کو دل سےنہیں لگانا چاہیے اپ ڈیٹ 19 مارچ 2021 11:23am
سائیں! کراچی والوں پر یہ ٹیکس لگائیں

سائیں! کراچی والوں پر یہ ٹیکس لگائیں

حکمراں سوچتے ہیں کہ کراچی میں نہ کوئی دریا بہتا ہے، نہ چشمے نہ کوئی نہر، کم از کم یہاں گٹر ہی بہتے رہیں، شہری کچھ تو بہتا دیکھیں۔ شائع 19 فروری 2021 11:12am