چین کے قومی ترانے پر شور، فیفا کا ہانگ کانگ فٹبال پر جرمانہ

اپ ڈیٹ 10 اکتوبر 2019

ای میل

ہانگ کانگ کو مذکورہ میچ میں ایران سے شکست ہوئی تھی—فوٹو: رائٹرز
ہانگ کانگ کو مذکورہ میچ میں ایران سے شکست ہوئی تھی—فوٹو: رائٹرز

فٹ بال کی عالمی گورننگ باڈی (فیفا) نے ایران کے خلاف ورلڈ کپ کوالیفائر میچ کے دوران چین کے قومی ترانہ بجنے پر ناراضی کا اظہار کرنے پر ہانگ کانگ کی فٹ بال فیڈریش پر 15 ہزار سوئس فرینک جرمانہ کردیا۔

فیفا کی ڈسپلنری کمیشن نے ہانگ کانگ کے شائقین کی جانب سے چین کے قومی ترانے کے دوران شور شرابا کرنے اور اظہار ناراضی کو نامناسب قرار دیتے ہوئے 15 ہزار سوئس فرینک (13 ہزار 700 یورو) جرمانہ عائد کردیا۔

خیال رہے کہ ایران کے خلاف میچ میں ہانگ کانگ نے اپنی ٹیم میدان میں اتاری تھی لیکن چین سے منسلک ہونے کے باعث میچ سے قبل چین کا ہی قومی ترانہ بجایا گیا تھا۔

ہانگ کانگ میں چین کے خلاف جاری احتجاج کے دوران 10 ستمبر کو ایران کے خلاف ورلڈ کپ کوالیفائر میچ کھیلا گیا تھا جہاں میدان میں موجود شائقین نے شور شرابہ کیا تھا۔

ایران نے میچ میں باآسانی 0-2 سے کامیابی حاصل کرلی تھی۔

ورلڈ کپ کوالیفائر کے ایشیا زون کے گروپ سی میں ہانگ کانگ کی پوزیشن تیسری ہے اور ان کا اگلا میچ 14 نومبر کو بحرین کے خلاف ہانگ کانگ میں ہی ہوگا۔

علاوہ ازیں فیفا نے ملائیشیا کے خلاف میچ کے دوران شائقین کی مداخلت پر انڈونیشیا کی فٹ بال فیڈریشن پر بھی 45 ہزار سوئس فرینک جرمانہ عائد کر دیا ہے۔

الجزیرہ کی رپورٹ کے مطابق شائقین کی غیر ضروری مداخلت پر میچ کے دوسرے ہاف میں کھیل کو کافی دیر روکنا پڑا تھا تاہم ملائیشیا نے میچ سنسنی خیز مقابلے کے بعد 2-3 سے جیت لیا تھا۔

یاد رہے کہ فیفا نے سیرالیون کی ٹیم پربھی سائبیریا کے خلاف میچ میں اسی طرح کی صورت حال پر گزشتہ ماہ 50 ہزار سوئس فرینک جرمانہ عائد کرتے ہوئے خالی میدان میں میچ کھیلنے کا حکم دیا تھا۔

سیرالیون اس میچ کے بعد ورلڈ کپ کوالیفائر سے باہر ہوگئی تھی اور افریقہ کپ آف نیشنز 2021 کے لیے بھی کوالیفائنگ میچ کھیلنے کی سزا دی گئی تھی۔

سوڈان کے تماشائیوں کو چاڈ کے خلاف میچ کے دوران میدان میں داخلے پر 30 ہزار سوئس فرینک جرمانہ عائد کیا گیا تھا۔