سری نگر: دستی بم دھماکے میں ایک شخص ہلاک

اپ ڈیٹ 05 نومبر 2019

ای میل

ڈاکٹر نے بتایا کہ زخمیوں میں 2 افراد کی حالت تشویشناک ہے— فوٹو: رائٹرز
ڈاکٹر نے بتایا کہ زخمیوں میں 2 افراد کی حالت تشویشناک ہے— فوٹو: رائٹرز

مقبوضہ کشمیر کے مرکزی شہر سری نگر کی مارکیٹ میں دستی بم دھماکے میں ایک شخص جاں بحق ہوگیا۔

اس حوالے سے سری نگر پولیس اور ہسپتال انتظامیہ نے بتایا کہ دستی بم دھماکے میں 17 افراد زخمی بھی ہوئے۔

مزیدپڑھیں: مقبوضہ کشمیر میں سیب کی ترسیل کرنے والے 2 ٹرک ڈرائیور قتل

سری نگر پولیس چیف حسیب مغل نے بتایا کہ دھماکے سے 18 افراد زخمی ہوئے تھے، جن میں سے ایک شخص ہسپتال میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ دیا۔

علاوہ ازیں دھماکے میں مرنے والے کی شناخت ریڑھی بان کے طور پر ہوئی اور اس کا تعلق بھارتی ریاست اترپردیش سے تھا۔

دوسری جانب اس حوالے سے ایک ڈاکٹر نے بتایا کہ ’زخمیوں میں 2 افراد کی حالت تشویشناک ہے‘۔

ڈاکٹروں نے بتایا کہ زخمیوں میں سے 2 کو سر پر چوٹ لگی جنہیں تشویشناک حالت میں ہسپتال لایا گیا۔

واضح رہے کہ مقبوضہ کشمیر میں حالیہ ہفتوں میں کم سے کم 10 غیر مقامی مزدوروں بشمول ٹرک ڈرائیوروں کو مختلف واقعات میں مسلح افراد نے ہلاک کردیا ہے

مزیدپڑھیں: مقبوضہ کشمیر میں صورتحال کی بہتری کیلئے وقت درکار ہے، بھارتی سپریم کورٹ

پولیس مذکورہ حملے سمیت ان ہلاکتوں کا الزام بھارتی قبضے کے خلاف لڑائی لڑنے والوں پر عائد کررہی ہے۔

اس سے قبل 26 اکتوبر کو مقبوضہ کشمیر کے ضلع شوپیاں میں نامعلوم افراد نے سیب کی ترسیل پر معمور 2 ٹرک ڈارئیوروں کو قتل کرکے دونوں ٹرک کو آگ لگا دی تھی۔

رواں برس اگست کے اواخر میں شوپیاں میں ہی مسلح گروہ کے حملے میں سیب کے 2 تاجر اور ایک ڈرائیور ہلاک ہوگیا تھا اور ان کا تعلق بھی کشمیر سے نہیں تھا۔

مقبوضہ کشمیر میں سیب کا تجارتی حجم 2 ارب ڈالر تک ہے—فوٹو: رائٹرز
مقبوضہ کشمیر میں سیب کا تجارتی حجم 2 ارب ڈالر تک ہے—فوٹو: رائٹرز

یاد رہے کہ بھارت نے 5 اگست کو مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت سے متعلق آرٹیکل 370 کا خاتمہ کردیا تھا جس کے بعد مقامی صنعت خصوصاً سیب کی پیداوار اور اس کی ترسیل پر حملوں کے واقعات جنم لے رہے ہیں۔

واضح رہے کہ آرٹیکل 370 کے تحت ریاست جموں و کشمیر کو خصوصی اور منفرد مقام حاصل تھا اور آرٹیکل ریاست کو آئین بنانے اور اسے برقرار رکھنے کی آزادی دیتا تھا، تاہم بھارت نے اس خصوصی حیثیت کو ختم کردیا تھا۔