کورونا وائرس: میسی اور رونالڈو کا 10، 10 لاکھ یوروز عطیات کا اعلان

اپ ڈیٹ 25 مارچ 2020

ای میل

لیونل میسی اور کرسٹیانو رونالڈو دونوں نے 10، 10 لاکھ یوروز عطیات کا اعلان کیا— فائل فوٹو: اےا یف پی
لیونل میسی اور کرسٹیانو رونالڈو دونوں نے 10، 10 لاکھ یوروز عطیات کا اعلان کیا— فائل فوٹو: اےا یف پی

کورونا وائرس کے خلاف جنگ میں دنیا بھر کے فٹبالرز بھی میدان میں آ گئے ہیں اور عالمی شہرت یافتہ فٹبالر کرسٹیانو رونالڈو اور میسی نے لاکھوں ڈالرز کے عطیات کا اعلان کیا ہے۔

اسپین کے شہر بارسلونا کے ہسپتال کے مطابق بارسلونا کی نمائندگی کرنے والے ارجنٹائن کے مشہور اسٹار لیونل میسی نے ان کے ہسپتال کو 5 لاکھ یوروز عطیہ کیے ہیں جبکہ ایک اور ہسپتال کو بھی اتنی ہی رقم عطیہ کرنے کا اعلان کیا ہے۔

مزید پڑھیں: کورونا وائرس کے باعث اولمپکس 2020 اگلے سال تک ملتوی

یاد رہے کہ اسپین دنیا بھر میں وائرس سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والے ممالک میں سے ایک ہے اور اب وہاں ہلاکتیں چین سے بھی تجاوز کر چکی ہیں۔

اسپین میں اب تک 3 ہزار 434 افراد ہلاک اور 47 ہزار سے زائد متاثر ہو چکے ہیں۔

امریکی خبر رساں ایجنسی ایسوسی ایٹڈ پریس کے مطابق یوونٹس کی نمائندگی کرنے والے عالمی شہرت اسٹار کرسٹیانو رونالڈو اور ان کے ایجنٹ نے اپنے آبائی ملک پرتگال کے تین ہسپتالوں کے لیے مشترکہ طور پر 10 لاکھ یوروز عطیہ کردیے ہیں۔

پرتگال میں اب تک 2 ہزار 300 افراد میں وائرس کی تصدیق ہو چکی ہے جبکہ 30 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: شعیب اختر کا وزیر اعظم عمران خان سے ملک میں لاک ڈاؤن کرنے کا مطالبہ

میسی کے آبائی ملک ارجنتائن میں اب تک 300 کیسز اور 6 ہلاکتوں کی تصدیق ہو چکی ہے۔

انگلش پریمیئر لیگ کے مشہور کلب مانچسٹر سٹی کے منیجر پیپ گارڈیولا نے بھی اسپین کے لیے 9 لاکھ 20 ہزار یوروز عطیہ کرنے کا اعلان کیا۔

یاد رہے کہ کورونا وائرس نے چین کے شہر ووہان سے جنم لیا تھا جس کے نتیجے میں 3 ہزار سے زائد ہلاکتیں ہوئیں۔

چین نے صوبے ہوبے کو مکمل طور پر لاک ڈاؤن کردیا اور اس کی بدولت وہ اس وائرس پر قابو پانے میں کامیاب رہے لیکن اس کے بعد یہ دنیا بھر میں تیزی سے پھیلتا رہا۔

مزید پڑھیں: کورونا کے باعث لاک ڈاؤن، وسیم اکرم کی ویڈیو وائرل

اس وائرس سے یورپ، امریکا اور مشرق وسطیٰ یکساں طور پر متاثر ہوئے جس کے نتیجے میں دنیا بھر میں اب کم از کم 19 ہزار 675 افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔

وائرس کے سبب دنیا بھر کی کھیلوں کی سرگرمیاں منسوخ کردی گئی ہیں جبکہ رواں سال شیڈول اولمپکس سمیت سال کے بڑے کھیلوں کے مقابلے یورو کپ اور دیگر کو بھی ملتوی کردیا گیا۔