پی ایس ایل 2021: کھلاڑیوں کے چناؤ کیلئے ٹیموں کی ترتیب طے پاگئی

اپ ڈیٹ 24 دسمبر 2020

ای میل

پی سی بی ڈرافٹنگ کے والے سے تفصیلات جاری کرے گا — فوٹو: پی سی بی
پی سی بی ڈرافٹنگ کے والے سے تفصیلات جاری کرے گا — فوٹو: پی سی بی

پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے کہا ہے کہ پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) 2021 کے لیے کھلاڑیوں کی ڈرافٹنگ کے حوالے سے ٹیموں کی ترتیب کو حتمی شکل دے دی گئی ہے۔

پی سی بی کے اعلامیے کے مطابق دو دفعہ کی چمپیئن اسلام آباد یونائیٹڈ کی ٹیم پی ایس ایل2021 کی ڈرافٹنگ میں سب سے پہلے کھلاڑیوں کا انتخاب کرے گی۔

مزید پڑھیں: پی ایس ایل 2020 کیلئے کھلاڑیوں کی کیٹیگری کا اعلان

ملتان سلطانز اور پی ایس ایل 2020 کی فائنلسٹ ٹیم لاہور قلندرز بالترتیب دوسرے اور تیسرے نمبر پر اپنے کھلاڑیوں کو منتخب کرے گی۔

پشاور زلمی اور کوئٹہ گلیڈی ایٹرز بالترتیب چوتھے اور پانچویں نمبر پر دستیاب کھلاڑیوں سے چناؤ کریں گی، دونوں ٹیمیں 2017 اور 2019 کے ایڈیشنز میں چمپیئن رہ چکی ہیں۔

رواں برس پہلی مرتبہ پی ایس ایل چمپیئن کا اعزاز حاصل کرنے والی کراچی کنگز کو سب سے آخر میں چھٹے نمبر پر کھلاڑیوں کے انتخاب کا موقع ملے گا۔

پی سی بی نے اپنے اعلامیے میں کہا ہے کہ ٹیموں کے نمبرز کا فیصلہ لاہور میں پی سی بی ہیڈ کوارٹرز میں تمام 6 ٹیموں کے نمائندوں کی موجودگی میں کیا گیا۔

بیان کے مطابق اگلے 17 راؤنڈز کا فیصلہ اعداد و شمارکے ذریعے کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں: کراچی کنگز پی ایس ایل 2020 کی چمپیئن

پی سی بی نے کہا کہ پی ایس ایل 2021 کے لیے کھلاڑیوں کی ڈرافٹنگ کے حوالے سے مکمل تفصیلات جاری کی جائیں گی۔

اعلامیے میں کیٹیگریز اور کھلاڑیوں کے ناموں کے حوالے سے تفصیلات نہیں دی گئی ہیں تاہم پی ایس ایل 2020 میں سرفہرست کھلاڑیوں کو پلاٹینم، ڈائمنڈ، گولڈ، سلور اور ایمرجنگ کیٹیگریز میں شامل کیا گیا تھا۔

پی سی بی کی جانب سے جاری اعلامیے میں کہا گیا تھا کہ کھلاڑیوں کی تجدید کے عمل میں کھلاڑیوں کی گزشتہ ایڈیشنز سمیت قومی اور بین الاقوامی کرکٹ میں کارکردگی اور کرکٹرز کی ٹی20 فارمیٹ میں مقبولیت کو مدنظر رکھا گیا ہے۔

بیان میں کہا گیا تھا کہ پاکستان کی نمائندگی کرنے والے کھلاڑیوں کی بنیادی کیٹیگری گولڈ مقرر کی گئی ہے اور نئے قوانین کے مطابق ہر ٹیم گزشتہ ایڈیشن میں شامل زیادہ سے زیادہ 8 کھلاڑیوں کو آئندہ ایڈیشن کے لیے برقرار رکھ سکے گی۔

پی سی بی نے کہا تھا کہ کیٹیگری مرحلے کے مکمل ہونے سے قبل قومی کرکٹ ٹیم کا حصہ بننے والے 24 سال سے کم عمر کھلاڑی ایمرجنگ کیٹیگری کا حصہ نہیں ہوں گے جبکہ 24 سال سے کم عمر کھلاڑی 2 سال سے زائد عرصہ ایمرجنگ کیٹیگری کا حصہ نہیں رہ سکتے، تاہم 2 سالوں میں 4 یا اس سے کم میچ کھیلنے والے کھلاڑی ایمرجنگ کیٹیگری میں برقرار رہ سکتے ہیں۔