اہلخانہ کو 'کورونا ویکسین لگوانے' پر وفاقی وزیر پر تنقید

اپ ڈیٹ 30 مارچ 2021

ای میل

مذکورہ ویڈیو کلپ کے بعد انسٹاگرام پر اکاؤنٹ غیر فعال ہوگیا — فائل فوٹو: ٹوئٹر اکاؤنٹ
مذکورہ ویڈیو کلپ کے بعد انسٹاگرام پر اکاؤنٹ غیر فعال ہوگیا — فائل فوٹو: ٹوئٹر اکاؤنٹ

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے اتحادی اور مسلم لیگ قائداعظم (ق) کے وفاقی وزیر ہاؤسنگ طارق بشیر چیمہ کے گھر پر ان کے اہلخانہ کو کورونا ویکسین دینے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر منظر عام پر آنے کے بعد انہیں سخت تنقید کا سامنا ہے۔

طارق بشیر چیمہ کے اہلخانہ کے ایک فرد کی جانب سے انسٹاگرام پر شیئر کی گئی ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ گھر میں موجود متعدد افراد کو طبی عملہ کورونا ویکسین کے ٹیکے لگارہا ہے۔

مزید پڑھیں: پاکستان بھر میں کورونا وائرس سے بچاؤ کی ویکسین لگانے کے عمل کا آغاز

ویڈیو کلپ سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد مذکورہ انسٹاگرام اکاؤنٹ غیر فعال کردیا گیا۔

سابقہ ماڈل اور ٹیلی ویژن کی میزبان عفت عمر کو بھی انسٹاگرام پر ویڈیو ٹیگ کی گئی تھی۔

تاہم نجی نیوز چینل پر وفاقی وزیر نے اہلخانہ کو کورونا ویکسین کی خوارک دینے کے لیے اپنے سیاسی اثر و رسوخ کے استعمال سے متعلق الزام کو مسترد کردیا۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کی ٹیمیں آزمائشی ویکسین کا بوسٹر شاٹ لگانے کے لیے ان کے گھر آئیں۔

یہ بھی پڑھیں: حکومت سب سے زیادہ افادیت والی کورونا ویکسین حاصل کرنے کی خواہاں

طارق بشیر چیمہ نے مزید کہا کہ اس سے پہلے بھی ایسا ہی ہوا تھا۔

ویڈیو کلپس نے سوشل میڈیا پر طوفان برپا کردیا۔

عفت عمر نے نیوز چینل کا کلپ شیئر کرتے ہوئے کہا کہ 'دوستو! تھوڑا تحمل'۔

انٹرنیٹ صارفین اور صحافیوں نے وفاقی وزیر اور عفت عمر پر شدید تنقید کی۔

وزیر اعظم کے معاون خصوصی شہباز گل نے میرٹ کو نظر انداز کرکے ویکسین لگوانے پر عفت عمر کے عمل کو 'شرمناک حرکت' قرار دیا۔

انہوں نے کہا کہ یہ جعلی لنڈے کے لبرل صرف گالی گلوچ کرنے تک لبرل ہیں۔

شہباز گل نے کہا کہ انہیں اخلاقیات ہیں نہ ہی کوئی شرم و حیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ان کی باتیں سنو تو لگتا ہے ان سے بڑا کوئی قانون پسند نہیں اور کرتوت ان کے قدر اخلاق سے گرے ہوئے ہیں۔

پروڈیوسر عدیل راجا نے وزیر منصوبہ بندی و ترقیات اسد عمر سے واقعے کا نوٹس لینے کا مطالبہ کیا۔

عدیل راجا نے سوال اٹھایا کہ 'یہ امتیازی سلوک کیوں'۔

ٹی وی کی اینکر ماریہ میمن نے کہا پہلے آپ نے اپنے سیاسی اثر و رسوخ کا استعمال کرتے ہوئے ویکسین لگانے والوں کی قطار میں شامل ہوئے اور پھر سوشل میڈیا پر گھمنڈ، پاکستان کی شوبز شخصیات کو اپنا استحقاق کا جائزہ لینا چاہیے۔

صحافی مہر تارڑ نے کہا کہ میں چیمہ سے معافی کی توقع کرتی ہوں اور ان سے معافی مانگنے کا مطالبہ کرتی ہوں۔

انہوں نے مزید کہا کہ پہلے انہوں نے اپنے اہل خانہ کے ساتھ مل کر ایک غیر اخلاقی کام کیا اور پھر جھوٹ بولا کہ وہ ٹرائل شاٹ تھے۔