اینیمیٹڈ پولیٹیکل کامیڈی فلم 'دی ڈونکی کنگ' چین میں ریلیز

22 نومبر 2021
چین میں فلم 19 نومبر کو ریلیز ہوئی—پرومو فوٹو
چین میں فلم 19 نومبر کو ریلیز ہوئی—پرومو فوٹو

مقبول اینیمیٹڈ کامیڈی پاکستانی فلم 'دی ڈونکی کنگ' کو آبادی کے لحاظ سے دنیا کے سب سے بڑے اور عالمی سطح پر سب سے زیادہ سینما رکھنے والے ملک چین میں ریلیز کردیا گیا۔

'دی ڈونکی کنگ' کو ابتدائی طور پر سب سے پہلےپاکستان میں اکتوبر 2018 میں ریلیز کیا گیا تھا، جسے شائقین نے خوب سراہا تھا۔

'دی ڈونکی کنگ' کو پاکستان کے علاوہ اور چین سے قبل امریکا اور برطانیہ سمیت دنیا کے تقریبا ایک درجن کے قریب ممالک میں ریلیز کیا جا چکا ہے۔

تالسمان اور جیو فلمز کے بینر تلے بنائی گئی فلم کو چین میں 19 نومبر کو ریلیز کیا گیا اور ابتدائی رپورٹس کے مطابق 'دی ڈونکی کنگ' کو پسند کیا جا رہا ہے۔

انگریزی اخبار ’دی نیوز‘ کے مطابق 'دی ڈونکی کنگ' کو ابتدائی طور پر 50 سینماؤں میں ریلیز کیا گیا، جہاں پہلے ہی دن اس کے 5 ہزار شوز دکھائے گئے۔

فلم کو چینی زبان میں ریلیز کیا گیا—پرومو فوٹو
فلم کو چینی زبان میں ریلیز کیا گیا—پرومو فوٹو

فلم کی کہانی کو چینی شائقین کی جانب سے خوب پسند کیا جا رہا ہے اور فلم کی ٹیم کو امید ہے کہ 'دی ڈونکی کنگ' وہاں کمائی کے نئے ریکارڈز بنائے گی۔

'دی ڈونکی کنگ' پہلے ہی سب سے زیادہ کمائی کرنے والی پاکستانی اینیمیٹڈ فلم بن چکی ہے اور اسے یورپی ملک اسپین، جنوبی کوریا، روس، یونان، ترکی، پیرو، کولمبیا، ایکواڈور، یوکرین، قازقستان اور تائیوان سمیت 10 سے زائد ممالک کے سینما گھروں میں ریلیز کیا جا چکا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: 'دی ڈونکی کنگ' چین میں ریلیز کیلئے تیار

’دی ڈونکی کنگ’ کو انگریزی زبان میں بھی ڈب کیا جا چکا ہے اور یہ فلم امریکا اور برطانیہ میں ناظرین کے لیے ایمازون پرائم پر موجود ہے۔

‘ڈونکی کنگ’ کی کہانی ‘آزاد نگر’ نامی جانوروں کی ایک سلطنت پر مبنی ہے، جس کے بادشاہ یعنی شیر ریٹائرڈ ہوکر اپنی سلطنت کو کسی نئے بادشاہ کے حوالے کرنے کا فیصلہ کرتے ہیں۔

فلم کی کہانی اس وقت دلچسپ بن جاتی ہے، جب ایک گدھے کو سلطنت کے راجا کے طور پر نامزد کیا جاتا ہے۔

فلم کو تقریبا ایک درجن کے قریب زبانوں میں ترجمہ کیا جا چکا ہے—پرومو فوٹو
فلم کو تقریبا ایک درجن کے قریب زبانوں میں ترجمہ کیا جا چکا ہے—پرومو فوٹو

گدھے کو ایک چالاک لومڑی اس عہدے کے لیے تجویز کرتی ہیں، تاہم گدھا سلطنت کا نیا راجا بننے کو تیار نہیں ہوتا۔

چالاک لومڑی کی جانب سے سمجھائے جانے کے بعد ہی گدھا راجا بننے کو تیار ہوجاتا ہے لیکن کہانی اس کے انتخاب کے گرد ہی گھومتی ہے اور اس دوران کئی دلچسپ واقعات سامنے آتے ہیں۔

اس فلم میں جانوروں کے کرداروں پر کئی نامور اداکاروں نے اپنی آواز کا جادو جگایا ہے۔

گدھے کی آواز پر جان ریمبو (افضل خان) چالاک لومڑی پر حنا دلپزیر نے آواز کا جادو جگایا ہے، جب کہ دیگر کرداروں کی آوازوں پر جاوید شیخ، فیصل قریشی اور غلام محی الدین سمیت دیگر اداکاروں نے صداکاری کی ہے۔

ضرور پڑھیں

تبصرے (0) بند ہیں