اومنی گروپ کے ڈائریکٹر نمر مجید رہا

28 اکتوبر 2018

ای میل

نمبر مجید — فوٹو، ڈان نیوز
نمبر مجید — فوٹو، ڈان نیوز

کراچی: عدالت اومنی گروپ کے ڈائریکٹر انور مجید کے صاحبزادے نمبر مجید کو اہلِ خانہ کی یقین دہانی پر رہا کردیا گیا۔

نمبر مجید کے اہلِ خانہ کی جانب سے سپریم کورٹ سے مہلت کی اپیل کی گئی تھی جس کی سماعت کے دوران وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) کے حکام بھی پیش ہوئے۔

عدالت میں ایف آئی اے حکام نے موقف اختیار کیا کہ نمبر مجید کو گرفتار نہیں کیا گیا بلکہ ان سے کچھ پوچھ گچھ کے لیے حراست میں لیا گیا تھا۔

نمبر مجید کے اہلِ خانہ نے یقین دہانی کروائی کہ وہ منی لانڈرنگ کیس میں مکمل تعاون کریں گے جبکہ ٹرائل کورٹ یا سپریم کورٹ میں جب بھی طلب کیا جائے گا تو وہ پیش ہوں گے۔

مزید پڑھیں: اومنی گروپ کے ڈائریکٹر نمر مجید احاطہ عدالت سے گرفتار

اہل خانہ کی جانب سے تعاون کی یقین دہانی کے بعد ایف آئی اے نے نمبر مجید کو رہا کردیا۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز منی لانڈرنگ ازخود نوٹس کیس کی سماعت کے دوران ایف آئی اے نے نمبر مجید کو کیس کی سماعت کے بعد احاطہ عدالت سے گرفتار کرلیا تھا۔

گزشتہ روز سماعت کے دوران چیف جسٹس نے ریمارکس دیے تھے کہ اطلاع ملی ہے کہ جتنے بھی اومنی گروپ کے گرفتار ڈائریکٹرز ہیں وہ حوالات میں بھی موبائل فون استعمال کر رہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: اومنی گروپ کی شوگر ملز کو کام کرنے کی اجازت دی جائے، نیشنل بینک

چیف جسٹس نے کہا تھا کہ یہ بہت ہی تشویش ناک بات ہے، ساتھ ہی ہدایت جاری کی کہ اومنی گروپ کے تمام ڈائریکٹرز سے موبائل فون چھین لیے جائیں۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیے تھے کہ اومنی گروپ کے افراد جیل کے اندر سے احکامات جاری کررہے ہیں، اگر ان سے موبائل فون نہیں چھینے گئے تو آئی جی جیل خانہ جات کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

اسی دوران اس موقع پر اومنی گروپ کے وکیل نعیم بخاری نے عدالت میں کہا کہ اگر ایف آئی اے گروپ کے ڈائریکٹر کو گرفتار نہ کرے تو آج ہی اپنا بیان ریکارڈ کروادیں گے۔