سام سنگ گلیکسی ایس 10 کے فنگرپرنٹ سنسر میں مسئلہ سامنے آگیا

17 اکتوبر 2019

ای میل

گلیکسی ایس 10 — رائٹرز فوٹو
گلیکسی ایس 10 — رائٹرز فوٹو

سام سنگ کے فلیگ شپ فون گلیکسی ایس 10 میں فنگرپرنٹ سنسر کے حوالے سے شکایات سامنے آئی ہے اور کمپنی نے بھی اس کا اعتراف کرتے ہوئے جلد سافٹ وئیر اپ ڈیٹ جاری کرنے کا وعدہ کیا ہے۔

خبررساں ادارے رائٹرز کے مطابق ایک برطانوی صارف نے مقامی میڈیا سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ گلیکسی ایس 10 میں ایک بگ سامنے آیا ہے جو صارف کی بجائے کسی کے بھی فنگرپرنٹ سے ڈیوائس کو ان لاک کردیتا ہے۔

اس صارف نے ایک تھرڈ پارٹی اسکرین پروٹیکٹر خریدا تھا، جس کے بعد اس کے شوہر نے اپنے فنگرپرنٹ سے فون ان لاک کردیا، حالانکہ اس کی انگلیوں کے نشان ڈیوائس میں رجسٹر نہیں تھے۔

سام سنگ نے کسٹمر سپورٹ ایپ میں اس مسئلے کا نوٹس لیا جبکہ جنوبی کوریا کے آن لائن بینک کاکاﺅ بینک نے صارفین کو مشورہ دیا کہ وہ اس وقت تک گلیکسی ایس 10 میں فنگرپرنٹ کے ذریعے فون لاک یا ان لاک کرنے کا سلسلہ منقطع کردیں جب تک مسئلہ حل نہیں ہوجاتا۔

خیال رہے کہ رواں سال مارچ سے صارفین کو دستیاب گلیکسی ایس 10 سام سنگ کا پہلا فون تھا جس میں فنگرپرنٹ سنسر ڈسپلے کے اندر دیا گیا تھا اور کمپنی نے اسے بائیومیٹرک تصدیق کا انقلابی فیچر قرار دیا تھا۔

یہ تو واضح نہیں کہ مسئلہ اصل میں ہے کیا، مگر گلیکسی ایس 10 میں الٹرا سانک سنسر فنگرپرنٹ کی شناخت کے لیے استعمال کیا گیا ہے۔

پلاسٹک یا سیلیکون اسکرین پروٹیکٹر سے وہ متاثر ہوسکتا ہے اور یہی وجہ ہے کہ سام سنگ کی جانب سے صارفین کو منظورہ شدہ پروٹیکٹر خریدنے کا مشورہ دیا جاتا ہے۔

سام سنگ نے اس حوالے سے ٹیکنالوجی سائٹ انگیجیٹ کو بتایا 'ہم اس معاملے کی تحقیقات کررہے ہیں، ہم اپنے تمام صارفین کو مشورہ دیتے ہیں کہ وہ سام سنگ کی منظورہ کردہ ایسیسریز استعمال کریں جو صرف سام سنگ منصوعات کے لیے ڈیزائن کی گئی ہو'۔