وسیم اکرم اور ان کی اہلیہ ایک مرتبہ پھر سی ویو پر موجود کچرے پر برہم

اپ ڈیٹ 05 اکتوبر 2020

ای میل

شنیرا اکرم نے ٹوئٹر پر اپنی ایک تصویر شیئر کی جس میں وہ سی ویو پر موجود ہیں اور ارد گرد بہت زیادہ کچرا موجود ہے— فائل فوٹو: انسٹاگرام
شنیرا اکرم نے ٹوئٹر پر اپنی ایک تصویر شیئر کی جس میں وہ سی ویو پر موجود ہیں اور ارد گرد بہت زیادہ کچرا موجود ہے— فائل فوٹو: انسٹاگرام

پاکستانی کرکٹ ٹیم کے سابق فاسٹ باؤلر وسیم اکرم اور ان کی اہلیہ شنیرا اکرم کی جانب سے کراچی کے ساحل سمندر پر موجود کچرے کے ڈھیر پر ایک مرتبہ پھر برہمی کا اظہار کیا گیا ہے۔

گزشتہ برس وسیم اکرم کی اہلیہ نے کراچی کے ساحل سمندر پر کچرے سے متعلق شکایت کی تھی، شنیرا اکرم نے سی ویو کو عوام کے لیے خطرناک اور غیر محفوظ قرار دیا تھا جبکہ اپنی ٹوئٹس میں حیران کن ویڈیوز بھی شیئر کیں، جن میں سی ویو پر کچرے میں بڑی تعداد میں استعمال شدہ سرنجیں نظر آئی تھیں۔

انہوں نے اپنی پہلی ٹوئٹ میں لکھا کہ میں کراچی کی شہری ہونے کے ناطے کلفٹن کے ساحل کو خطرناک قرار دیتی ہوں اور مطالبہ کرتی ہوں کہ یہاں ایمرجنسی نافذ کردی جائے۔

اپنی اگلی ٹوئٹ میں انہوں نے لکھا تھا کہ 'میں نے صرف 10 منٹ کے اندر یہاں 4 درجن کھلی ہوئی سرنجز دیکھیں، ہمارے سمندر کو فوری بند کرنا ہوگا، جب تک حکام اس کی صفائی نہیں کرتے اور اسے عوام کے لیے محفوظ قرار نہیں دیتے، لوگوں کی زندگیاں خطرے میں ہیں'۔

مزید پڑھیں: شنیرا اکرم کا شہریوں کیلئے سی ویو بند کرنے کا مطالبہ

انہوں نے متعدد تصاویر شیئر کرتے ہوئے اپیل کی تھی کہ سب ان کی آواز سنیں اور ساحل سمندر کو شہریوں کے لیے فوری طور پر بند کریں۔

جس کے بعد اسی روز ان کی شکایات کا نوٹس لیتے ہوئے حکومت سندھ نے صفائی شروع کروائی تھی اور شہریوں کے حفاظت کے لیے دفعہ 144 بھی نافذ کردی گئی تھی۔

اب آج (5 اکتوبر کی) صبح شنیرا اکرم نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنی ایک تصویر شیئر کی جس میں وہ سی ویو پر موجود ہیں اور ارد گرد بہت زیادہ کچرا موجود ہے۔

وسیم اکرم کی اہلیہ شنیرا اکرم نے مختلف ٹوئٹس میں لکھا کہ ہمارا شہر روزانہ ہمیں بتارہا ہے کہ وہ تکلیف میں ہے۔

انہوں نے لکھا کہ ہم مدد کے لیے چیخ رہے ہیں لیکن کوئی ہماری آواز نہیں سن سکتا۔

شنیرا اکرم نے لکھا کہ اس سب کو رکنا چاہیے، اس نے ہمارے شہر، ہمارے لوگ اور ثقافت کو شرمندہ کیا، یہ ہم نہیں ہیں۔

ایک اور ٹوئٹ میں شنیرا اکرم نے لکھا کہ یہ گندگی صرف ساحل پر نہیں ہے، یہاں ہر جگہ کچرا موجود ہے۔

شنیرا اکرم نے لکھا کہ یہ کچرا گلی، کوچوں، ہماری دکانوں کے باہر، دفاتر کے سامنے، اسکولز کے پاس، خالی زمین پر، ہمارے گھروں کے باہر، ہمارے واحد ساحل پر ہے اور ہمارے سمندر میں ہے، ہم اس میں تیر رہے ہیں۔

دوسری جانب وسیم اکرم نے بھی ٹوئٹر پر ایک ویڈیو جاری کی اور سی ویو پر موجود کچرے کے ڈھیر پر برہمی کا اظہار کیا۔

وسیم اکرم نے اپنی ویڈیو میں کہا کہ میں نے سوچا تھا کہ ہفتے کا پہلا دن ہے ساحل سمندر جا کر مزہ آئے گا لیکن میں نے اپنی بیوی کو سی ویو پر لا کر بہت بڑی غلطی کردی۔

یہ بھی پڑھیں: شنیرا اکرم کی شکایت، سندھ حکومت نے ساحلِ سمندر پر صفائی شروع کروادی

انہوں نے ویڈیو میں سمندر پر موجود کچرا دکھاتے ہوئے مزید کہا کہ یہ حال دیکھیں، اس کچرے کا مورد الزام ہم نے کسی کو نہیں ٹھہرانا بلکہ بطور قوم خود کو الزام دینا ہے۔

وسیم اکرم نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ یہ شرمناک ہے، پوری دنیا کہتی ہے کہ پاکستان بہت خوبصورت ملک ہے، لوگ خوبصورت ہیں، انہوں نے مزید کہا کہ لوگ خوبصورت ہیں لیکن گندے بھی ہیں یہ بات تو مانیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ وہ لوگ جنہیں سوشل میڈیا پر نصیحتیں کرتے ہیں تو اب وقت ہے نصیحتیں کرنے کا، یہ کچرا سمندر کے اندر سے آیا ہے، جو سمندر میں ڈالا جاتا ہے وہ بڑی لہر کے ساتھ باہر آتا ہے۔