بھارت تیسرا ون ڈے بھی ہار گیا، جنوبی افریقہ کا 0-3 سے کلین سوئپ

23 جنوری 2022
ایندائل فلکوایو نے ایک ہی اوور میں دھاون اور پنت کو آؤٹ کر کے بھارت کو بڑا نقصان پہنچایا— فوٹو بشکریہ آئی سی سی
ایندائل فلکوایو نے ایک ہی اوور میں دھاون اور پنت کو آؤٹ کر کے بھارت کو بڑا نقصان پہنچایا— فوٹو بشکریہ آئی سی سی

جنوبی افریقہ نے بھارت کو تیسرے ون ڈے میچ میں سنسنی خیز مقابلے کے بعد 4 رنز سے شکست دے کر سیریز میں 0-3 سے کلین سوئپ کر لیا۔

کیپ ٹاؤن میں کھیلے گئے سیریز کے تیسرے اور آخری ون ڈے میچ میں بھارت نے ٹاس جیت کر فیلڈنگ کا فیصلہ کیا تو جینمن ملان ایک اور کپتان ٹیمبا باووما 8 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئے۔

جب ایڈن مرکرم 15 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے تو جنوبی افریقہ کی ٹیم 70رنز پر تین وکٹیں گنوا کر مشکلات سے دوچار تھی۔

اس مرحلے پر کوئنٹن ڈی کوک کا ساتھ دینے وین ڈر ڈوسن آئے اور دونوں نے ذمے دارانہ کھیل پیش کرتے ہوئے چوتھی وکٹ کے لیے 144 رنز کی شراکت قائم کی۔

ڈی کوک نے عمدہ فارم کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے 12 چوکوں اور دو چھکوں کی مدد سے 24رنز کی اننگز کھیلی، وہ 214 کے مجموعی اسکور پر پویلین لوٹے۔

جب ڈی کوک آؤٹ ہوئے تو 14 اوورز سے زائد کا کھیل باقی تھا اور ایسا محسوس ہوتا تھا کہ میزبان ٹیم باآسانی سوا تین سو رنز کا مجموعہ اسکور بورڈ پر سجانے میں کامیاب رہے گی لیکن پریسید کرشنا سمیت دیگر بھارتی باؤلرز نے پروٹیز کے عزائم کو ناکام بنا دیا۔

39 رنز بنانے والے ڈیوڈ ملر کے علاوہ کوئی اور بلے باز بھارتی باؤلنگ کا مقابلہ نہ کر سکا اور پوری ٹیم 50ویں اوور میں 287 رنز پر ڈھیر ہو گئی۔

بھارت کی جانب سے کرشنا نے تین جبکہ جسپریت بمراہ اور دیپک چاہر نے دو، دو وکٹیں حاصل کیں۔

288 رنز کے ہدف کے تعاقب میں بھارت کا آغاز کچھ اچھا نہ تھا اور کپتان لوکیش راہل صرف 9رنز بنا کر لنگی نگیدی کی وکٹ بن گئے۔

اس مرحلے پر شیکھر دھاون کا ساتھ دینے ویرات کوہلی آئے اور دونوں نے نصف سنچریاں اسکور کرنے کے ساتھ ساتھ دوسری وکٹ کے لیے 98رنز کی شراکت قائم کی۔

تاہم بھارت کو بڑا دھچکا اس وقت لگا جب ایندائل فلکوایو نے 61 رنز بنانے والے دھاون کے بعد اگلی ہی گیند پر ریشابھ پنت کی اہم وکٹ بھی حاصل کر لی۔

شریاس آئیر اور ویرات کوہلی نے مل کر اسکور کو 156 تک پہنچایا ہی تھا کہ کوہلی کی 65 رنز کی اننگز بھی اختتام کو پہنچی۔

سوریا کمار یادیو نے آے ہی روایتی جارحانہ انداز اپنایا اور آئیر کے ساتھ ساتھ مل کر مجموعے کو 195 تک پہنچا دیا، آئیر 26 اور 39 جبکہ جاینت یادیو صرف دو رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

223 رنز پر 7 وکٹیں گرنے کے بعد میچ میں بھارت کی شکست صاف نظر آتی تھی لیکن اس مرحلے پر دیپک چاہر نے جارحانہ نصف سنچری سے میچ کا نقشہ بدل دیا۔

آل راؤنڈر نے بہترین کھیل کا مظاہرہ کرتے ہوئے جسپریت بمراہ کے ہمراہ آٹھویں وکٹ کے لیے 55رنز جوڑ کر اپنی ٹیم کو فتح کی دہلیز پر پہنچا دیا۔

فتح سے محض 10 رنز کی دوری پر چاہر کی ہمت جواب دے گئی اور وہ 34 گیندوں پر 54رنز بنانے کے بعد نگیدی کا شکار بن گئے۔

اس کے بعد جسپریت بمراہ بھی فلکوایو کو وکٹ دے بیٹھے جبکہ پریٹوریس نے یزویندر چاہل کو آؤٹ کر اپنی ٹیم کو سنسنی خیز مقابلے میں چار رنز کی فتح سے ہمکنار کرا دیا۔

بھارت کی پوری ٹیم آخری اوور میں 283رنز پر ڈھیر ہو گئی۔

جنوبی افریقہ کی جناب سے نگیدی وار فلکوایو نے تین، تین جبکہ ڈیوین پریٹوریس نے دو وکٹیں اپنے نام کیں۔

سنچری بنانے والے کوئنٹن ڈی کوک کو میچ کے ساتھ ساتھ سیریز کا بھی بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔

اس مچ میں فتح کے ساتھ ہی جنوبی افریقہ نے سیریز میں 0-3 سے کلین سوئپ مکمل کر لیا۔

ضرور پڑھیں

تبصرے (0) بند ہیں