ملتان: امدادی رقوم کی تقسیم کے دوران مبینہ طور پر بھگدڑ سے خاتون جاں بحق

اپ ڈیٹ 10 اپريل 2020

ای میل

احساس پروگرام کے تحت خاندانوں میں رقم تقسیم کی جارہی ہے—فوٹو: ٹوئٹر
احساس پروگرام کے تحت خاندانوں میں رقم تقسیم کی جارہی ہے—فوٹو: ٹوئٹر

صوبہ پنجاب کے ضلع ملتان میں احساس کفالت پروگرام کی رقم کی تقسیم کے دوران مبینہ طور پر بھگدڑ سے ایک خاتون دم توڑ گئیں۔

ڈان نیوز ٹی وی کے مطابق ملتان میں قاسم پور کالونی میں احساس پروگرام کے لیے قائم سینٹر میں مبینہ طور پر بھگدڑ سے وہاں امدادی رقم وصول کرنے کے لیے آئی ایک 70 سالہ خاتون دم توڑ گئی جبکہ 20 دیگر خواتین زخمی بھی ہوگئیں۔

واقعے کے فوری بعد پولیس اور ریسکیو ٹیمیں جائے وقوع پر پہنچ گئیں اور جاں بحق اور زخمیوں کو ہسپتال منتقل کیا۔

مزید پڑھیں: احساس ریلیف پروگرام شروع، بینکوں کے باہر لوگوں کا ہجوم

اس حوالے سے ترجمان ریسکیو 1122 احسان نے ڈان نیوز کو بتایا کہ جاں بحق عورت کو نشتر ہسپتال ملتان منتقل کردیا گیا جبکہ 20 سے زائد زخمیوں کو بھی طبی امداد دی جا رہی ہیں۔

دوسری جانب پولیس ترجمان نے مذکورہ معاملے پر کہا کہ امدادی رقم وصول کرنے کے لیے آنے والی 70 سالہ نظیراں بی بی گیٹ کے باہر رقم تقسیم ہونے کے وقت سے پہلے ہی صبح 7 بجے دل کا دورہ پڑنے کے باعث جاں بحق ہوئیں۔

ترجمان نے کہا کہ نظیراں بی بی صبح کو سورج میانی سے مذکورہ سینٹر سے کافی دور واقع قاسم پور پہنچی تھیں تاہم عمر زیادہ ہونے اور کمزور ہونے کی وجہ سے وہ گرگئی۔

انہوں نے بتایا کہ بعد ازاں خاتون کو ہسپتال لے جایا گیا تاہم وہ جانبر نہ ہوسکیں۔

پولیس کی جانب سے امدادی سینیٹر میں رقم کی فراہمی کے دوران بھگدڑ یا دھکم پیل کی تردید کی گئی اور کہا گیا کہ ایسا کوئی واقعہ نہیں ہوا اور نہ ہی کوئی عورت زخمی ہوئی۔

انہوں نے مزید کہا کہ واقعے کی اطلاع ملتے ہی آر پی او ملتان وسیم احمد خان، سی پی او ملتان محمد زبیر دریشک، ڈپٹی کمشنر ملتان محمد عامر خٹک اور دیگر سینئر افسران موقع پر پہنچے اور صورتحال کا جائزہ لیا۔

ویڈیو دیکھیں: وزیراعظم احساس پروگرام کے تحت مستحقین کو کیش گرانٹ کی فراہمی کا آغاز

ترجمان پولیس فیاض نے بتایا کہ ضلع ملتان میں رقم کی تقسیم کے دوران کورونا وائرس کے پیش نظر حکومتی احکامات کو مد نظر رکھتے ہوئے سماجی فاصلے کو یقینی بنایا جا رہا ہے۔

واضح رہے کہ وزیراعظم عمران خان کی جانب سے گزشتہ روز 144 ارب روپے کا احساس ریلیف پروگرام شروع کردیا گیا ہے جس کے تحت کورونا وائرس کی وجہ سے لگائے گئے لاک ڈاؤن سے متاثر یومیہ اجرت اور مستحق خاندان میں 4 ماہ کے مجموعی وظیفہ 12 ہزار روپے تقسیم کیا جارہا ہے۔

اس پروگرام کے تحت ملک بھر میں ایک کروڑ 20 لاکھ خاندانوں میں یہ رقم تقسیم کی جائے گی جس کے لیے ملک بھر میں نامزد بینکوں حبیب بینک لمیٹڈ اور بینک الفلاح کی 17 سو برانچز مختص کی گئی ہیں جبکہ صوبائی حکومتوں کے تعاون سے 3 ہزار کیمپس بھی تشکیل دیے گئے ہیں۔