شریف خاندان چاہتا ہے چمڑی جائے مگر دمڑی نہ جائے، فردوس عاشق اعوان

اپ ڈیٹ 14 نومبر 2019

ای میل

انہوں نے اپیل مسلم لیگ (ن) سے اپیل کی کہ آپ کا ہمارا میچ ٹی 20 یا ون ڈے نہیں بلکہ لانگ سیریز ہے—فائل فوٹو: ڈان نیوز
انہوں نے اپیل مسلم لیگ (ن) سے اپیل کی کہ آپ کا ہمارا میچ ٹی 20 یا ون ڈے نہیں بلکہ لانگ سیریز ہے—فائل فوٹو: ڈان نیوز

وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے نواز شریف کی صحت پر سیاست کے بجائے انسانیت کو فوقیت دی لیکن شریف خاندان چاہتا ہے چمڑی جائے مگر دمڑی نہ جائے۔

اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئےانہوں نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) کے ترجمان نواز شریف کی صحت پر سیاست چمکاتے ہوئے عوام کو یہ تاثردے رہے ہیں کہ حکومت انڈیمنٹی بانڈ سے سیاسی مقاصد حاصل کرے گی جو غلط ہے۔

مزیدپڑھیں: نواز شریف کو 4 ہفتوں کے لیے بیرون ملک جانے کی مشروط اجازت

انہوں نے کہا کہ انسانی ہمدردی کی بنیاد پر سابق وزیراعظم نواز شریف کو ون ٹائم سہولت دی، جس کا مضحکہ خیز انداز میں مسلم لیگ (ن) کے ترجمان مذاق اڑا رہے ہیں جس پرافسوس ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز حکومت نے نواز شریف کو 4 ہفتوں کے لیے بیرون ملک جانے کی مشروط اجازت دینے کا فیصلہ کیا تھا۔

کابینہ کی ذیلی کمیٹی کے اجلاس کے بعد وزیر قانون بیرسٹر فروغ نسیم نے اسلام آباد میں معاون خصوصی برائے احتساب شہزاد اکبر کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا تھا کہ نواز شریف کو صرف ایک بار کے لیے بیرون ملک جانے کی اجازت دی گئی ہے۔

اس ضمن میں معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ سابق صدر جنرل پرویز مشرف اور نواز شریف کےکیسز میں بنیادی فرق ہے، پرویز مشرف کسی عدالت سے سزایافتہ نہیں تھے ناہی ان کا نام ای سی ایل میں تھا، ماضی میں لیگی وزرا سابق صدر جنرل پرویزمشرف کےکیس پرسیاسی بیانات دیتےرہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ سزایافتہ شخص کانام ایگزیٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) سےنہیں نکالاجاتا تاہم حکومت نے رعایت دی اور بانڈز کا مقصد ایک قانونی تقاضا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: نواز شریف کی بیرونِ ملک روانگی کا معاملہ مزید پیچیدہ ہوگیا

انہوں نے اپیل مسلم لیگ (ن) سے اپیل کی کہ آپ کا ہمارا میچ ٹی 20 یا ون ڈے نہیں بلکہ لانگ سیریز ہے، اس لیے نواز شریف کی صحت پر سیاست سے گریز کریں اور ضمانتی باونڈ جمع کرائیں کیونکہ دونوں فریقین کو مستقبل میں ایک دوسرے سے میچ کھیلنے کے مواقع مل جائیں گے۔

فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ جاتی امرا میں آج ہونے والا اجلاس اس بات کا تعین کرےگا کہ وہ نواز شریف کو ملنے والی سہولت کا کس طرح فائدہ اٹھائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت نےبال ن لیگ کی کورٹ میں پھینک دی ہے۔

نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کیلئے آج ہی عدالت سے رجوع کرنے کا امکان

دوسری جانب مسلم لیگ (ن) کی مرکزی قیادت نے اپنے قائد نواز شریف کا نام ای ایل سی سے نکالنے کے لیے عدالت سے آج ہی رجوع کرنے کا امکان ظاہر کردیا۔

اس ضمن میں مسلم لیگ (ن) کی مرکزی قیادت نے آج اہم اجلاس طلب کرلیا۔

مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب اور شہباز شریف سہ پہر 3 بجے پریس کانفرنس میں اہم اعلان کریں گے۔

اس حوالے سے مسلم لیگ (ن) کےسینئر رہنما نے بتایا کہ 'سپریم کورٹ کے ذریعے نواز شریف کا نام ای سی ایل سےنکالنے کا معاملہ مزکری قیادت کے زیر غور ہے'۔

انہوں نے بتایا کہ قومی اسمبلی کے اپوزیشن لیڈر شہباز شریف اگلے ایک دو روز میں پٹیشن دائر کرسکتے ہیں۔

دوسری جانب نواز شریف کے بیٹے حسین نواز نے ٹوئٹ میں حکومتی پیشکش کو 'حکومت کی بدترین مثال' قرار دی۔

مولانا فضل الرحمٰن صرف 13 کے اسکور پر ہی بولڈ ہوگئے، فردوس عاشق اعوان

معاون خصوصی اطلاعات و نشریات فردوس عاشق اعوان نے جمعیت علماے اسلام (جے یوآئی) مولانا فضل الرحمٰن کا نام لیے بغیر کہا کہ روحانی اور مذہبی پیشوا اسلام آباد سے ہجرت کر گئے۔

انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمٰن نے اپنی ذاتی خواہش کی تکمیل کے لیے اسلام آباد میں سیاسی اسٹیج سجایا لیکن ان کا سارا اسکریٹ ختم ہوگیا۔

ان کا کہنا تھا کہ مولانا فضل الرحمٰن کےلیے دعا گو ہیں کہ اللہ انہیں ملک کی سلامتی و ترقی سے متعلق بہتر فیصلے کرنے کی توفیق عطا کرے۔

مزیدپڑھیں: آزادی مارچ: مولانا فضل الرحمٰن کا آج سے پلان 'بی' شروع کرنے کا اعلان

معاون خصوصی نے امید ظاہر کی کہ جو پلان بی دیا ہے، اس ڈرامے کی اگلی قسط اسی طرح فلاپ ہوگی، جس طرح دھرنا ہوا۔

انہوں نے کہا کہ عوام سیاسی فنکاروں کی فنکاریوں سے آگاہ ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ مولانا فضل الرحمٰن صرف 13 کے اسکور پر ہی بولڈ ہوگئے۔

واضح رہے جمعیت علمائے اسلام (ف) کی صوبائی قیادتوں نے جمعرات (آج) کے لیے مارچ کے پلان 'بی' کا اعلان کردیا ہے۔

خیبر پختونخوا کے امیر سینیٹر مولانا عطاالرحمٰن نے بتایا تھا کہ جمعرات کو 2 بجے انڈس ہائی وے بند کی جائے گی، پشاور ۔ لاہور موٹروے کو بند کیا جائے گا، چکدرہ کے مقام پر سوات، دیر، چترال اور باجوڑ کی لائنز بند ہوں گی جبکہ شاہراہ قراقرم کو بھی بند کیا جائے گا۔

ناظم عمومی بلوچستان آغا سید محمود شاہ نے پلان 'بی' بتاتے ہوئے کہا تھا کہ دوپہر 2 بجے کوئٹہ ۔ چمن شاہراہ مکمل بند کردی جائے گی، ایران ۔ تفتان شاہراہ، بلوچستان ۔ کراچی شاہراہ کو خضدار کے مقام پر اور پنجاب ۔ بلوچستان شاہراہ کو ڈیرہ غازی خان باؤنڈری پر بند کیا جائے گا۔