کورونا وائرس: 3 مالیاتی اداروں کے ساتھ ڈیڑھ ارب ڈالر کے معاہدوں پر دستخط

اپ ڈیٹ 20 جون 2020
—فوٹو: ریڈیو پاکستان
—فوٹو: ریڈیو پاکستان

پاکستان اور 3 بین الاقوامی مالیاتی اداروں کے درمیان ایک ارب 50 کروڑ ڈالر کے مالیاتی معاہدوں پر دستخط کر دیئے گئے۔

معاہدے پر دستخط کی تقریب میں وزیراعظم عمران خان بھی موجود تھے۔

ان معاہدوں کی روشنی میں عالمی بینک، ایشیائی ترقیاتی بینک اور ایشین انفرااسٹرکچر انویسٹمنٹ بینک پاکستان کو مذکورہ رقم فراہم کریں گے جس سے نظام صحت کو مستحکم کرنے اور کووڈ 19 سے پیدا ہونے والے منفی معاشی اثرات کو کم کرنے کے لیے اقدامات کیے جائیں گے۔

مزید پڑھیں: کورونا وائرس کے باعث ملکی معیشت کو 25 کھرب روپے کا نقصان

ایشیائی ترقیاتی بینک کووڈ 19 ایکٹو رسپانس اینڈ ایکسپینڈیچر سپورٹ پروگرام کے لیے پاکستان کو 50 کروڑ ڈالر کی مالی معاونت فراہم کرے گا۔

اس پروگرام کے تحت حکومت طبی نظام کو مضبوط بنانے اور کورونا وبا کے سماجی و معاشی اثرات میں کمی لانے کے لیے رقم خرچ کرے گی۔

علاوہ ازیں ایشین انفرااسٹرکچر انویسٹمنٹ بینک بھی کووڈ 19 ایکٹو رسپانس اینڈ ایکسپینڈیچر سپورٹ پروگرام کے لیے پاکستان کو 50 کروڑ ڈالر کی مالی تعاون فراہم کرے گا۔

اس کا مقصد بھی کورونا وبا کے اثرات پر قابو پانے کی حکومتی کوششوں میں تعاون فراہم کرنا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: کورونا وائرس سے عالمی معیشت کو 88 کھرب ڈالر تک خسارے کا امکان

اس کے علاوہ انسانی وسائل کی ترقی کے لیے ضروری صحت و تعلیم کے نظام کو مضبوط بنانے، معاشی پیداوار میں خواتین کے کردار کی حوصلہ افزائی اور سماجی تحفظ کے منصوبوں کی بہتری میں معاونت کے سلسلے میں سیکورنگ ہیومین انویسٹمنٹس ٹو فاسٹر ٹرانسفارمیشن (شفٹ) کے لیے 50 کروڑ ڈالر کے معاہدے پر بھی دستخط کیے گئے۔

پاکستان کی جانب سے سیکریٹری اقتصادی امور نور احمد جبکہ عالمی بینک کے کنٹری ڈائریکٹر پچھاموتھو ایلانگوان اور ایشیائی ترقیاتی بینک کی کنٹری ڈائریکٹر مس شیاﺅ ہونگ نے معاہدوں پر دستخط کیے۔

خیال رہے کہ عالمی وبا کورونا وائرس کے باعث پاکستان کو پہنچنے والا معاشی نقصان 25 کھرب روپے تک پہنچنے کا تخمینہ لگایا گیا ہے۔

وزیر اعظم کے مشیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ کی سربراہی میں ہونے والے اجلاس میں بتایا گیا تھا کہ مجموعی ملکی پیداوار (جی ڈی پی) کے ذریعے لگائے گئے اندازے کے مطابق ملکی معیشت کا حجم 440 کھرب سے 25 کھرب روپے کم ہو کر 415 کھرب ہوگیا ہے۔

مزید پڑھیں: کورونا کے بعد معیشت کے آغاز کیلئے بجٹ میں کچھ نہیں، تاجر رہنما

ایک اور اندازے کے مطابق شرح نمو کی بنیاد پر یہ نقصان تقریباً 16 کھرب روپے ہے۔

واضح رہے کہ پاکستان میں کورونا وائرس تیزی سے پھیل رہا ہے اور ہر گزرتے دن کے ساتھ کیسز میں تو اضافہ ہو ہی رہا ہے تاہم اب اموات کی تعداد بھی کافی تیزی سے بڑھنے لگی ہے۔

19 جون تک آنے والے نئے کیسز کے بعد ملک میں مجموعی کیسز کی تعداد ایک لاکھ 68 ہزار 564 ہوگئی جبکہ اموات 3 ہزار 294 تک جاپہنچیں۔

اعداد و شمار کے مطابق ملک میں جمعہ کو ملک بھر میں 5387 نئے کیسز اور 129 اموات کا اضافہ ہوا۔

خیال رہے کہ گزشتہ 2 روز میں ملک میں ہر روز 130 سے زائد اموات رپورٹ ہوئیں۔

تبصرے (0) بند ہیں