کورونا وبا: ملک میں متاثرین 22 ہزار سے متجاوز، اموات 500 سے زائد ہوگئیں

ای میل

پاکستان میں کورونا متاثرین کی تعداد میں اضافہ ہورہا ہے—فائل فوٹو: اے ایف پی
پاکستان میں کورونا متاثرین کی تعداد میں اضافہ ہورہا ہے—فائل فوٹو: اے ایف پی

دنیا بھر میں 185 ممالک سے زائد میں پھیلنے والی عالمی وبا کورونا وائرس سے جہاں اب تک 35 لاکھ سے زائد افراد متاثر اور ڈھائی لاکھ ہلاک ہوچکے ہیں وہیں یہ وائرس پاکستان میں بھی یومیہ سیکڑوں لوگوں کو متاثر کرنے اور متعدد کی اموات کا سبب بن رہا ہے۔

ملک میں اب تک کورونا وائرس کے مصدقہ مریضوں کی تعداد 22223 ہوچکی ہے جبکہ 514 افراد اس وبا سے انتقال کرچکے ہیں۔

حکومت کی جانب سے اس وبا پر قابو پانے کے لیے مختلف اقدامات کیے گئے ہیں جس میں جزوی لاک ڈاؤن اور دیگر پابندیاں شامل ہیں تاکہ لوگ ایک دوسرے سے میل جول سے اجتناب کریں اور وائرس کا پھیلاؤ روکا جاسکے۔

تاہم اس کے باوجود ملک میں عوام کی بڑی تعداد اب تک اس وائرس سے متاثر ہوچکی ہے اور ان کیسز میں ایک بڑی تعداد مقامی طور پر منتقلی کے کیسز کی ہے۔

یہاں یہ واضح رہے کہ پاکستان میں 26 فروری کو بیرون ملک سے وطن واپس آنے والے شہری میں کورونا وائرس کا پہلا کیس سامنے آیا تھا، تاہم اس کے بعد سے اس وبا کے مقامی منتقلی کے کیسز بڑھ گئے ہیں۔

اگر پاکستان میں کورونا کے پھیلاؤ پر ایک نظر ڈالیں تو ابتدائی عرصے میں یعنی 26 فروری سے 31 مارچ تک کیسز کی تعداد 2 ہزار کے لگ بھگ تھی جبکہ 26 لوگ موت کا شکار ہوئے تھے۔

تاہم اپریل میں وائرس کے پھیلاؤ میں اچانک اضافہ دیکھا گیا اور ایک ماہ میں کیسز 2 ہزار سے بڑھ کر ساڑھے 16 ہزار سے تجاوز کرگئے جبکہ ایک ماہ میں 359 اموات بھی دیکھنے میں آئیں۔

بعد ازاں مئی کے آغاز میں وائرس کا پھیلاؤ مزید تیز ہوا اور تقریباً ہر روز ہی ایک ہزار سے زائد کیسز سامنے آنے لگے اور صرف 4 روز میں تقریباً 5 ہزار کیسز آئے جبکہ 101 اموات بھی ریکارڈ کی گئیں۔

گزشتہ روز (4 مئی) کو اب تک کے ایک روز کے سب سے زیادہ 1371 کیسز سامنے آئے تھے۔

آج (5 مئی) کو ابھی تک کورونا وائرس کے نئے کیسز اور اموات سامنے آئیں جبکہ صحتیاب افراد کی تعداد میں اضافہ دیکھا گیا۔

بلوچستان

صوبہ بلوچستان کے ترجمان کوارڈینیٹر برائے ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ اور صوبائی ہیلتھ ڈائریکٹریٹ کورونا وائرس سیل ڈاکٹر وسیم بیگ کے فراہم کردہ اعداد و شمار کے مطابق صوبے میں کورونا وائرس کے 174 نئے کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جس کے بعد صوبے میں متاثرہ افراد کی تعداد ایک ہزار 495 ہو گئی ہے۔

صوبے میں پانچ مئی کو مزید 863 افراد کے کورونا وائرس کے ٹیسٹ کیے گئے جس کے بعد اب تک بلوچستان میں کیے گئے ٹیسٹ کی مجموعی تعداد 11 ہزار 496 ہو گئی ہے۔

بلوچستان میں اب تک 206 افراد وائرس سے صحتیاب ہو چکے ہیں جبکہ مجموعی طور پر صوبے میں 21 افراد وائرس کا شکار ہو کر جاں بحق ہوئے ہیں۔

صوبے میں اب تک 30 ہزار سے زائد افراد کی اسکریننگ کی جا چکی ہے جبکہ صوبے میں وائرس کے مشتبہ مریضوں کی تعداد 16ہزار 334 ہے۔

سندھ

سندھ میں کورونا وائرس کے مزید 307 کیسز اور 11 اموات ریکارڈ کی گئیں۔

وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے بتایا کہ آج 307 نئے کیسز رپورٹ ہوئے، جس کے بعد سندھ میں کل کیسز کی تعداد 8189 ہوگئی۔

ساتھ ہی ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ صوبے میں 24 گھنٹوں کے دوران مزید 11 افراد انتقال کرگئے جس کے بعد مجموعی اموات 148 تک پہنچ گئی۔

مراد علی شاہ کے مطابق مزید 42 مریض بھی ہوگئے اور کُل صحتیاب ہونے والوں تعداد 1671 ہوگئی۔

پنجاب

ادھر پنجاب میں بھی کورونا وائرس کے مزید 30 نئے کیسز اور 8 اموات سامنے آگئیں۔

ترجمان پرائمری اینڈ سیکںڈری ہیلتھ کیئر نے ان کیسز کی تصدیق کی اور بتایا کہ صوبے میں مجموعی طور پر متاثرین کی تعداد 8133 ہوگئی۔

ان کیسز کی تفصیل کے بارے میں ان کا کہنا تھا کہ زائرین سیںٹر سے768 افراد، 1926 رائے ونڈ سے منسلک افراد، 86 قیدی اور 4866 عام شہریوں میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی۔

انہوں نے مزید بتایا کہ صوبے میں 8 نئی اموات سے مجموعی تعداد 144 ہوگئی جبکہ 25 مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔

خیبر پختونخوا

محکمہ صحت خیبر پختونخوا کے مطابق کورونا وائرس کے 211 نئے کیسز سامنے آگئے جس کے بعد صوبے میں متاثرہ افراد کی تعداد 3499 ہوگئی۔

صوبے میں وبا سے مزید 9 اموات کی بھی تصدیق کی گئی جس کے بعد یہاں جاں بحق مریضوں کی تعداد 194 ہوگئی ہے۔

اموات میں اضافہ پشاور، چارسدہ، مردان، مانسہرہ اور ہری پور میں ہوا۔

صحتیاب افراد

آج بھی مزید 186 افراد نے کورونا وائرس کو شکست دی اور شفایاب ہوگئے۔

واضح رہے کہ پاکستان میں صحتیاب ہونے والے متاثرین کی تعداد میں روز بروز اضافہ ہورہا ہے جو دیگر افراد کے لیے حوصلہ افزا ہے۔

جس کے بعد ملک میں مجموعی طور پر شفایاب ہونے والوں کی تعداد 5635 سے بڑھ کر 5801 تک پہنچ گئی۔

ملک کی مجموعی صورتحال

اگر ملک کی اب تک کی مجموعی صورتحال کو دیکھیں تو صوبہ پنجاب اور سندھ کیسز کے اعداد سے آگے پیچھے ہیں۔

پنجاب میں اب تک 8103 افراد وائرس کا شکار ہوئے ہیں جبکہ سندھ میں یہ تعداد 7882 ہے۔

خیبرپختونخوا میں متاثرین کی تعداد 3499 جبکہ بلوچستان میں 1495 لوگ وائرس کا شکار ہوئے ہیں۔

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں کورونا مریضوں کی تعداد 464 ہے جبکہ گلگت بلتستان میں 372 لوگ وائرس سے متاثر ہوچکے ہیں۔

آزاد کشمیر میں اس وقت سب سے کم کیسز آئے ہیں اور وہاں متاثری کی تعداد 71 ہے۔

اموات کے حساب سے سب سے آگے خیبرپختونخوا ہے۔

  • خیبرپختونخوا: 194

  • سندھ: 148

  • پنجاب: 144

  • بلوچستان: 21

  • اسلام آباد: 04

  • گلگت بلتستان: 03

  • آزاد کشمیر: کوئی نہیں


پاکستان میں کورونا وائرس

خیال رہے کہ ملک میں کورونا وائرس کا پہلا کیس 26 فروری 2020 کو کراچی میں سامنے آیا اور 25 مارچ تک کیسز کی تعداد ایک ہزار تک پہنچ چکی تھی۔

تاہم اس کے بعد مذکورہ وائرس نے پاکستان میں اپنے پنجے گاڑنا شروع کردیے اور اب تک 20 ہزار سے زائد وائرس سے متاثر ہوچکے ہیں۔

ملک میں کورونا وائرس کے پہلے کیس سے لے کر اب تک کیا صورتحال رہی اور کس روز کتنے کیسز سامنے آئے؟ مکمل تفصیل جاننے کے لیے یہاں کلک کریں۔


پاکستان میں اموات

ملک میں 18 مارچ کو کورونا وائرس سے پہلی موت خیبرپختونخوا میں ہوئی جس کے بعد 31 مارچ تک مجموعی اموات 26 تک پہنچیں۔

تاہم یکم اپریل سے لے کر 30 اپریل تک مزید 359 اموات دیکھی گئیں، بعد ازاں مئی کے آغاز میں ہی ملک میں اموات کی تعداد 450 سے تجاوز کرگئی جو کورونا وائرس سے متعلق تشویشناک صورتحال کو ظاہر کرتی ہے۔

ملک میں ہونے والی پہلی موت سے لے کر اب تک کس روز کتنی اموات ہوئیں؟ مکمل تفصیل جاننے کے لیے یہاں کلک کریں۔