عالمی وبا کورونا وائرس
لائیو

عالمی وبا کورونا وائرس

اہم نکات:

  • کورونا وائرس سال 2019 دسمبر میں چین میں رپورٹ ہوا، 11 مارچ 2020 کو اسے ’’عالمی وبا‘‘ قرار دیا گیا۔

  • 192 سے زائد ممالک/خطے اس عالمی وبا کا شکار ہوچکے ہیں۔

  • دنیا بھر میں 24 کروڑ سے زائد افراد متاثر ہوچکے ہیں، جن میں سے 49 لاکھ سے زائد افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔

  • پاکستان میں متاثرہ افراد کی تعداد 12 لاکھ سے زائد ہے جن میں سے 28 ہزار سے زائد انتقال کر چکے ہیں جبکہ 12 لاکھ سے زائد مریض صحتیاب بھی ہوئے ہیں۔

  • کورونا وائرس سے متعلق تازہ ترین خبروں کیلئے کلک کریں۔

تازہ ترین
8:47 PM

موڈرنا کی اومیکرون کے لیے مخصوص کووڈ ویکسین کا کلینکل ٹرائل شروع

Jan 25, 2022
11:50 PM

اومیکرون کے دیگر اقسام سے مختلف ہونے کا ایک اور ثبوت سامنے آگیا

7:16 PM

عتیقہ اوڈھو 9 دن بعد کورونا سے صحت یاب

Jan 24, 2022
8:03 PM

سائنو ویک ویکسین استعمال کرنے والوں کیلئے فائزر ویکسین کا بوسٹر ڈوز زیادہ بہتر قرار

Jan 20, 2022
5:39 PM

اومیکرون قسم بچوں کے لیے زیادہ بڑا خطرہ ہے، تحقیق

Jan 19, 2022
12:11 PM

اداکارہ حرا مانی کورونا کا شکار

Jan 18, 2022
10:36 PM

کورونا کی قسم اومیکرون کے بارے میں سائنسدانوں کا نیا انکشاف

9:32 PM

کووڈ ویکسینز کی چوتھی خوراک کے بعد بھی لوگ اومیکرون سے بیمار ہوسکتے ہیں، تحقیق

Jan 17, 2022
10:29 PM

اومیکرون کے خلاف موڈرنا کی مخصوص ویکسین کا ڈیٹا مارچ تک دستیاب ہونے کا امکان

8:20 PM

پاکستان میں روایتی چینی ادویات کا کووڈ کے علاج کا ٹرائل کامیاب

جنوری 27, 2022 08:47pm

موڈرنا کی اومیکرون کے لیے مخصوص کووڈ ویکسین کا کلینکل ٹرائل شروع

موڈرنا نے کورونا وائرس کی قسم اومیکرون کے لیے مخصوص ویکسین کا کلینکل ٹرائل پہلے رضاکار کو اس کا استعمال کراکے شروع کردیا ہے۔

موڈرنا نے یہ کلینکل ٹرائل اس وقت شروع کیا جب کچھ دن قبل فائزر/بائیو این ٹیک نے بھی اومیکرون قسم کو ہدف بنانے والی ویکسین کے ٹرائل کا آغاز کیا۔

کمپنی کی جانب سے اومیکرون بوسٹر کی آزمائش 2 گروپس میں کی جارہی ہے۔

پہلا گروپ ایسے افراد کا ہے جن کو موڈرنا کی اصل ویکسین کی 2 خوراکوں کا استعمال کرایا گیا جبکہ دوسرا گروپ ان افراد کا ہے جو ویکسینیشن مکمل کرانے کے بعد بوسٹر ڈوز کا بھی استعمال کرچکے ہیں۔

مکمل تفصیلات اس لنک پر جاکر پڑھیں

11:50 PM, Jan 25

اومیکرون کے دیگر اقسام سے مختلف ہونے کا ایک اور ثبوت سامنے آگیا

کورونا وائرس کی دیگر اقسام کے مقابلے میں اومیکرون کو زیادہ متعدی خیال کیا جاتا ہے۔

اب یہ انکشاف ہوا ہے کہ سابقہ اقسام کے مقابلے میں وہ پلاسٹک اور جلد پر زیادہ دیر تک بچنے کی صلاحیت بھی رکھتا ہے۔

جاپان میں ہونے والی ایک طبی حقیق میں لیبارٹری ٹیسٹوں میں دریافت کیا گیا کہ اومیکرون قسم پلاسٹک کی سطح اور انسانی جلد پر دیگر اقسام کے مقابلے میں زیادہ وقت تک زندہ رہ سکتی ہے۔

تحقیق کے مطابق اس قسم کا بہتر ماحولیاتی اسستحکام اس کے متعدی ہونے کی صلاحیت کو برقررا رکھتا ہے اور اسی کے نتیجے میں اومیکرون کو ڈیلٹا کی جگہ لینے میں مدد ملی اور وہ برق رفتاری سے پھیل گئی۔

مکمل تفصیلات اس لنک میں جاکر پڑھیں

7:16 PM, Jan 25

عتیقہ اوڈھو 9 دن بعد کورونا سے صحت یاب

سینیئر اداکارہ عتیقہ اوڈھو نے بھی کورونا سے صحت یاب ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے ویڈیو میں مداحوں کا شکریہ ادا کیا۔

عتیقہ اوڈھو نے 24 جنوری کو جاری کردہ ویڈیو میں بتایا کہ ویکسینیشن کی وجہ سے ان میں کورونا کی شدید علامات ظاہر نہیں ہوئی تھیں اور وہ جلد صحت یاب بھی ہوگئیں۔

عتیقہ اوڈھو نے 16 جنوری کو انسٹاگرام پوسٹ کے ذریعے بتایا تھا کہ ان میں کورونا کی تشخیص ہوئی ہے اور انہوں نے خود کو گھر تک محدود کرلیا۔

تفصیلات یہاں جانیں

8:03 PM, Jan 24

سائنو ویک ویکسین استعمال کرنے والوں کیلئے فائزر ویکسین کا بوسٹر ڈوز زیادہ بہتر قرار

چین کی کمپنی سائنو ویک بائیوٹیک لمیٹڈ کی تیار کردہ کووڈ 19 ویکسین کی 2 خوراکیں استعمال کرنے والے افراد اگر بوسٹر ڈوز کے لیے کسی مختلف کمپنی کا انتخاب کریں تو ان کو کورونا کی قسم اومیکرون سے زیادہ تحفظ ملتا ہے۔

آکسفورڈ یونیورسٹی اور برازیل کے محققین کی تحقیق میں سائنو ویک ویکسین کی 2 خوراکیں استعمال کرنے والے 18 سال سے زائد عمر کے 1240 افراد پر مختلف کمپنیوں کی ویکسینز کے بوسٹر ڈوز کے امتزاج کی آزمائش کی گئی تھی۔

تحقیق میں جن افراد کو بوسٹر کے طور پر سائنو ویک ویکسین کی تیسری خوراک استعمال کرائی تو 28 دن بعد اینٹی باڈیز کی سطح ضرور بلند ہوئی۔

مگر جن افراد کو فائزر/بائیو این ٹیک، ایسٹرا زینیکا یا جانسن اینڈ جانسن ویکسین کا بوسٹر ڈوز دیا گیا ان میں اومیکرون قسم سے زیادہ ٹھوس تحفظ ملا۔

مکمل تفصیلات اس لنک میں جاکر پڑھیں

5:39 PM, Jan 20

اومیکرون قسم بچوں کے لیے زیادہ بڑا خطرہ ہے، تحقیق

کورونا وائرس کی قسم اومیکرون سابقہ اقسام کے برعکس ممکنہ طور پر بچوں کے لیے زیادہ خطرناک ہوسکتی ہے۔

جنوبی افریقہ کے نیشنل انسٹیٹوٹ فار کمیونیکیبل ڈیزیز کی اس تحقیق کووڈ کے باعث ہسپتال میں داخلے ہونے والے 56 ہزار 164 افراد کے ڈیٹا کے کے تجزیے سے دریافت ہوا کہ جنوبی افریقہ میں اومیکرون کی لہر کے دوران 4 سال سے کم بچوں کے ہسپتال میں داخلے کی شرح ڈیلٹا کے مقابلے میں 49 فیصد زیادہ تھی۔

تحقیق کے مطابق 4 سے 18 سال کی عمر کے افراد میں کووڈ کے باعث زیادہ بیمار ہوکر ہسپتال میں داخل ہونے کی شرح ڈیلٹا کے مقابلے میں 25 فیصد تھی مگر بیٹا کے مقابلے میں کم تھی۔

تحقیق کے مطابق بچوں میں تو ہسپتال داخلے کی شرح میں اضافہ ہوا مگر ڈیٹا سے بھی معلوم ہوا کہ بالغ افراد میں اومیکرون سے ہسپتال داخلے کی شرح جنوبی افریقہ میں کورونا کی دیگر اقسام کے مقابلے میں سب سے کم تھی۔

مکمل تفصیلات اس لنک پر جاکر پڑھیں

12:11 PM, Jan 19

اداکارہ حرا مانی کورونا کا شکار

اداکارہ حرا مانی کورونا کا شکار ہوگئیں، انہوں نے 19 جنوری کو انسٹاگرام پر اپنی تصویر شیئر کرتے ہوئے مداحوں کو بتایا کہ ان کا کورونا کا ٹیسٹ مثبت آگیا اور انہوں نے خود کو گھر تک محدود کردیا۔

تفصیلات یہاں جانیں

10:36 PM, Jan 18

کورونا کی قسم اومیکرون کے بارے میں سائنسدانوں کا نیا انکشاف

اومیکرون کیسز کی شدید لہر مستقبل قریب میں کورونا وائرس کی وبا کے خاتمے کا راستہ کھول سکے گی کیونکہ اس سے ہونے والی بیماری کی شدت پہلے کے مقابلے میں کم اور ڈیلٹا سے تحفظ فراہم کرتی ہے۔

جنوبی افریقہ میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں دریافت کیا گیا کہ جو لوگ ماضی میں ڈیلٹا قسم سے بیمار ہوچکے ہیں، وہ اومیکرون کا ہدف بھی بن سکتے ہیں، مگر اومیکرون سے متاثر افراد ڈیلٹا سے بیمار نہیں ہوسکتے۔

تحقیق کے مطابق بالخصوص وہ افراد جن کی ویکسینیشن ہوچکی ہوتی ہے۔

محققین نے بتایا کہ ویکسینیشن نہ کرانے والے افراد کے نتائج ابھی واضح نہیں۔

مکمل تفصیلات اس لنک پر جاکر پڑھیں

9:32 PM, Jan 18

کووڈ ویکسینز کی چوتھی خوراک کے بعد بھی لوگ اومیکرون سے بیمار ہوسکتے ہیں، تحقیق

کووڈ ویکسین کی 4 خوراکیں بھی کورونا کی قسم اومیکرون سے بیماری سے بچانے مین مددگار ثابت نہیں ہوتیں۔

اسرائیل میں ہونے والی تحقیق کے حتمی نتائج تو ابھی تک جاری نہیں ہوئے مگر اس میں شامل ماہرین نے بتایا کہ اگرچہ ویکسین (موڈرنا یا فائزر) کی اضافی یا چوتھی خوراک سے کچھ اثرات تو مرتب ہوتے ہیں مگر رضاکاروں میں بیماری کی شرح میں 3 خوراکیں استعمال کرنے والے افراد سے زیادہ فرق نہیں تھا۔

محققین نے بتایا کہ کووڈ ویکسینز کورونا کی اقسام ایلفا اور ڈیلٹا کے خلاف تو زبردست تھیں مگر اس تحقیق میں دریافت کیا گیا کہ اومیکرون کے مقابلے میں وہ اتنی زیادہ اچھی نہیں۔

ابھی تک اس تحقیق کا ڈیٹا جاری نہیں ہوا اور محققین نے نتائج کو ابتدائی قرار دیا مگر ان کا کہنا تھا کہ ابتدائی نتائج کو عوامی مفاد کے لیے جاری کیا جارہا ہے۔

مکمل تفصیلات اس لنک پر جاکر پڑھیں

10:29 PM, Jan 17

اومیکرون کے خلاف موڈرنا کی مخصوص ویکسین کا ڈیٹا مارچ تک دستیاب ہونے کا امکان

موڈرنا کی کورونا وائرس کی قسم اومیکرون کے لیے مخصوص کووڈ ویکسین کی کلینکل ٹرائل آئندہ چند ہفتوں میں شروع ہوجائے گا جبکہ ڈیٹا مارچ تک سامنے آسکتا ہے۔

موڈرنا کے سی ای او اسٹیفن بینسل نے بتایا کہ کلینکل ٹرائل کے آغاز کے بعد توقع ہے کہ کمپنی ریگولیٹرز کے ساتھ ڈیٹا کو مارچ تک شیئر کرسکے گی۔

انہوں نے مزید بتایا کہ ویکسین مکمل ہوچکی ہے اور آنے والے ہفتوں میں کلینکل مرحلے میں داخل ہوجائے گی، ہمیں توقع ہے کہ مارچ تک ہمارے پاس اس کا ڈیٹا ہوگا جو ریگولیٹرز سے شیئر کیا جائے گا تاکہ اگلے مراحل کا تعین کیا جاسکے۔

موڈرنا کی جانب سے ایک اور سنگل ڈوز ویکسین تیار کی جارہی ہے جو کووڈ 19 کے بوسٹر ڈوز اور تجرباتی فلو ویکسین کا امتزاج ہے۔

مکمل تفصیلات اس لنک پر جاکر پڑھیں

8:20 PM, Jan 17

پاکستان میں روایتی چینی ادویات کا کووڈ کے علاج کا ٹرائل کامیاب

پاکستان میں کووڈ 19 کے علاج کے لیے روایتی چینی ہربل ادویات کے کلینکل ٹرائل کو مکمل کرلیا گیا ہے اور اسے کامیاب قرار دیا گیا ہے۔

تحقیقی ٹیم کے قائل ڈاکٹر رضا شاہ نے بتایا کہ ان ادویات کے ٹرائل میں کووڈ کے 300 ایسے مریضوں کو شامل کیا گیا تھا جن میں بیماری کی شدت معمولی یا معتدل تھی اور ان کا علاج گھر پر ہورہا تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ ادویات کی افادیت کی شرح 82.67 فیصد رہی۔

انٹرنیشنل سینٹر فار کیمیکل اینڈ بائیولوجیکل سائنس (آئی سی سی بی ایس) کے ڈائریکٹر پروفیسر اقبال چوہدری نے بتایا 'چونکہ ان ادویات کو کورونا کی مختلف اقسام سے متاثر مریضوں پر آزمایا گیا تو ہمیں توقع ہے کہ وہ دیگر اقسام کی طرح اومیکرون کے لیے بھی مؤثر ثابت ہوں گی'۔

مکمل تفصیلات اس لنک پر جاکر پڑھیں